پیاسی باؤلی توجہ کی محتاج

پیاسی باؤلی توجہ کی محتاج

Samaa Web Desk
February 7, 2018

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت کے گردونواح میں تاریخ کے بہت سارے خزانے موجود ہیں۔ انہی میں سے ایک کینتھلا باولی ہے جو پانچ صدیوں تک پیاسوں کی پیاس بجھاتی رہی مگر اب یہ تاریخی ورثہ خود شدید خطرے سے دوچار ہے۔

خشک اور بنجر میدان میں میٹھے،صاف اور شفاف پانی کی باؤلیسیڑھیاں جو پانی تک اترتی چلی جائیں۔ آرام سے اتریں،پیاس بجھائیں۔

اسلام آباد کے مضافات میں یہ مقام باؤلی کہلاتا ہے۔ پندرھویں صدی میں شیر شاہ سوری نے جی ٹی روڈ کے ساتھ ایسی بے شمار باؤلیاں بنوائیں۔

پانچ صدیاں بیت گئیں۔ اب تک تو جیسے وقت پانی بن کر اسی باؤلی میں سستا رہا تھا مگر اب اس تاریخی ورثے کو خطرہ ہے۔

صدیوں سے پیاسوں کی تشنگی مٹانے والی یہ تاریخی باؤلی اب خود توجہ کی پیاسی ہے۔

شیر شاہ سوری کی یہ تاریخی باولی صدیوں سے حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کر رہی ہے لیکن اس تاریخی خزانے کو بچانے کے لئے اب عملی اقدامات کی ضرورت ہے۔  سماء