دنیا کا ذہین ترین بچہ

January 2, 2018

مصر کے 13 سالہ عبدالرحمن حسین نے ملائیشیا میں منعقد ہونے والے مقابلے میں دنیا کے ذہین ترین بچّے کا اعزاز حاصل کر لیا، مقابلے میں 70 سے زیادہ ممالک نے شرکت کی۔

مصری بچّے نے اپنی ذہانت کا استعمال کرتے ہوئے صرف 8 منٹوں میں ریاضی کے 230 پیچیدہ سوالات حل کر کے دنیا بھر سے آئے ہوئے 3000 شرکاء میں پہلی پوزیشن حاصل کر لی۔

عبدالرحمن حسین نے عرب میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ وہ اس کامیابی کے حوالے سے اپنے اساتذہ اور تربیت کاروں کا ممنون ہے۔ ان میں اُس کی خاتون استاد بتول محمد منتصر سرفہرست ہیں جنہوں نے عبدالرحمن کو اس مقابلے میں شرکت کے لیے خصوصی تربیت دی۔

بتول محمد منتصر کا کہنا ہے کہ یادداشت اور مشاہدے کو مضبوط بنانے کے لیے عبدالرحمن کی تربیت کا آغاز 2014 سے کیا گیا۔ اس دوران پیچیدہ نوعیت کی ذہنی مشقوں سے یہ بات سامنے آئی کہ عبدالرحمن کی ذہنی استعداد کی رفتار میں بڑی حد تک اضافہ ہوچکا ہے۔ بعد ازاں اسے ملائیشیا میں ہونے والے اس عالمی مقابلے کے لیے منتخب کر لیا گیا۔

بتول کے مطابق مقابلے میں امیدواروں کو 4 صفحات پر مشتمل ریاضی کے 315 پیچیدہ سوالات دیے گئے تھے اور انہیں مقررہ وقت میں ان میں زیادہ سے زیادہ سوالات کو حل کرنا تھا۔ مقابلے میں عبدالرحمن نے سب سے زیادہ 230 سوالات حل کر کے پہلی پوزیشن حاصل کی۔