ہوم   >  بلاگز

‘مفرور ملزم کو قانون کوئی حق نہیں دیتا’

1 week ago

حقوق کیلئے عدالت کے سامنے سرینڈر کرنا پڑے گا

پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما اور معروف قانون دان بیرسٹر اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ مفرور شخص کو قانون کسی قسم کا حق نہیں دیتا جب تک کہ وہ عدالت کے سامنے پیش نہیں ہوتا۔

سماء ٹی وی کے پروگرام سوال میں میزبان عنبر شمسی سے گفتگو کرتے ہوئے اعتزاز احسن نے کہا کہ کوئی بھی شخص، چاہیے پرویز مشرف ہو یا میں، جب تک مفرور ہے، قانون اس کو کسی قسم کا حق نہیں دیتا۔

واضح رہے کہ میزبان نے سوال پرویز مشرف سے متعلق کیا تھا۔ پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کا کیس اسلام آباد کی خصوصی عدالت میں چل رہا ہے اور درجنوں مرتبہ طلب کرنے کے باجود وہ عدالت میں پیش نہیں ہوئے جس پر خصوصی عدالت نے ان کو مفرور قرار دیتے ہوئے ان کی غیرموجودگی میں فیصلہ سنانے کا اعلان کیا اور اس کیلئے 28 نومبر کی تاریخ مقرر کی۔

مگر فیصلہ سنانے سے قبل ہی تحریک انصاف کی حکومت نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ خصوصی عدالت کو فیصلہ سنانے سے روکا جائے کیوں کہ ملزم کو صفائی دینے کا موقع نہیں ملا جس پر اسلام ہائیکورٹ نے حکومت کی استدعا منظور کرتے ہوئے خصوصی عدالت کو فیصلہ سنانے سے روک دیا۔

اعتزاز احسن نے کہا کہ پرویز مشرف کو صفائی کا موقع بار بار دیا گیا مگر وہ پیش نہ ہوئے۔ اب وہ مفرور ہے تو قانون ان کو کسی قسم کا حق فراہم نہیں کرتا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پرویز مشرف کو صفائی کا حق مانگنے کیلئے سب سے پہلے پاکستان آکر عدالت کے سامنے سرینڈر کرنا ہوگا اور پھر عدالت کی مرضی ہے کہ وہ ان کو اسپتال میں رکھتی ہے یا کہیں اور بھیج دیتی ہے۔

میزبان نے سوال کیا کہ پھر تحریک انصاف کی حکومت نے مفرور ملزم کے لیے عدالت جاکر ایک غلط نظیر قائم کی ہے۔ اس پر اعتزاز احسن نے زور دیتے ہوئے اور تکرار کے ساتھ کہا کہ حکومت نے بالکل غلط نظیر قائم کی ہے۔ ایک مفرور کیلئے آپ کوئی حق مانگ ہی نہیں سکتے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں