Friday, January 21, 2022  | 17 Jamadilakhir, 1443

چینلزکی پالیسی پراثراندازہوناقابل مذمت ہے،براڈکاسٹرزايسوسی ايشن

SAMAA | - Posted: Nov 25, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 25, 2021 | Last Updated: 2 months ago

فائل فوٹو

پاکستان براڈ کاسٹرز ايسوسی ايشن نے مريم نواز کے اشتہارات روکنے کے اعتراف پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ سرکاری اشتہارات کو چينل کی پاليسی پر اثر انداز ہونے کے ليے استعمال کرنا شديد قابل مذمت ہے۔

پی بی اے کی پريس ريليز ميں کہا گيا ہے کہ حکومتوں کو آزادی اظہار اور ميڈيا پر کنٹرول کے ليے سرکاری اشتہارات کا حربہ استعمال نہيں کرنا چاہيے، جب حکومتيں آزادی اظہار پر قدغن لگانے کی کوشش کرتی ہيں تو سب سے زيادہ جمہوريت اور عوام متاثر ہوتے ہيں۔

پی بی اے کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت پر بھی اسی قسم کے الزامات لگ رہے ہيں۔ حکومت يقينی بنائے کہ ٹيکس دينے والوں کا پيسا درست طور پر استعمال ہو۔

پی بی اے نے مطالبہ کيا کہ موجودہ حکومت سميت پچھلے 20 سال ميں سرکاری اشتہارات پر خرچ کی گئی رقم کی تفصيلات عوام کے سامنے لائی جائيں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بدھ 24 نومبر کو اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب میں مریم نواز شریف نے اعتراف کیا تھا کہ سوشل میڈیا پر وائرل آڈیو ان کی ہے، جس میں انہوں نے سما اور اے آر وائی کے اشتہارات روکنے کا کہا تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube