ہوم   > ٹیکنالوجی

ڈرائیور کے بغیر بس سروس کا آئندہ ہفتے سے آغاز

2 months ago

 

سنگاپور نے ڈرائیور کے بغیر بس سروس شروع کرنے کا اعلان کردیا، جو آئندہ ہفتے سے آزمائشی طور پر سڑکوں پر نظر آئیں گی، ان بسوں میں موبائل ایپ کے ذریعے بھی سیٹ بک ہو سکے گی، اس سے قبل سنگاپور میں خود کار ٹیکسی سروس کامیابی سے جاری ہے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق ٹیکنالوجی سے لیس سنگاپور آئندہ ہفتے سے ایسی عوامی بسیں سڑکوں پر لا رہا ہے جن کو چلانے کیلئے ڈرائیور کی ضرورت نہیں ہوگی۔

حکام کے مطابق لوگوں کی ایک جگہ سے دوسری جگہ تک رسائی آسان بنانے کیلئے سنگاپور کی حکومت کا مشن ہے کہ ملک بھر میں خود کار بس سروس شروع کی جائے۔

سنگاپور خود کار عوامی بسیں چلانے کا تجربہ اگلے ہفتے 26 اگست سے شروع کررہا ہے جو 15 نومبر تک جاری رہے گا، اس دوران یہ بسیں 5.7 کلومیٹر پر محیط روٹ پر چلیں گی۔

اس سے قبل جرمنی میں بھی ڈرائیورز کے بغیر بسیں چلانے کا تجربہ کیا جارہا ہے، ان چھوٹی بسوں میں 6 مسافروں کے بیٹھنے کی گنجائش ہے۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق سنگارپور میں صارفین اپنے فون پر موجود ایپ کے ذریعے بس پر سیٹ بک کروا سکیں گے، جو ان مسافروں کو ان کی منتخب کردہ منزل تک پہنچائیں گی، جبکہ موبائل فون نہ ہونے کی صورت میں بس کے روٹ پر لگے بوتھ کے ذریعے بھی سیٹ بک کروائی جا سکتی ہے۔

خود کار بسیں بنانے والی کمپنی ’ایس ٹی انجینئرنگ‘ کے چیف ایگزیکٹو کے مطابق ان بسوں میں متعدد سینسر لگے ہوئے ہیں جن کی وجہ سے بسیں شہروں کے پیچیدہ ماحول میں بھی کامیابی کے ساتھ چل سکتی ہیں۔

کمپنی آئندہ برسوں میں ملک کے دیگر حصوں میں بھی خود کار بسوں کی سروس شروع کرنے کا ارادہ رکھتی ہے تاکہ لوگوں کو گھر سے ٹرین اسٹیشن تک پہنچنے میں بھی آسانی ہو۔

مزید جانیے : جرمنی میں بغیر ڈرائیور خودکار بسوں کی آزمائش کا آغاز

اس سے قبل 2016ء میں دنیا کی پہلی امریکی سافٹ ویئر کمپنی نے سنگاپور میں خودکار ٹیکسی سروس شروع کی تھی جس نے چند ہفتوں میں ہی آن لائن ٹیکسی کمپنی کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔

ڈرائیور کے بغیر چلنے والی ان بسوں میں کسی بھی ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کیلئے ایک ڈرائیور موجود رہے گا۔ اے ایف پی کے مطابق سنگاپور دوسرے ملکوں سے ٹیکنالوجی لینے کے بجائے خود مہارت حاصل کر رہا ہے اور دوسرے ملکوں کو بھی دعوت دے رہا ہے کہ وہ اپنی بنائی ہوئی ٹیکنالوجی کا تجربہ کرنے کیلئے سنگاپور کا رخ کریں۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں