واٹس ایپ اور انسٹا گرام کے ساتھ کیا نیا ہونے والا ہے؟

August 8, 2019

تصویر: اے ایف پی

سوشل میڈیا پر معروف ترین سائٹ فیس بک استعمال کرنے والوں کیلئے اہم خبر ہے کہ فیس بک، انسٹا گرام اور واٹس ایپ کو ضم کیا جا رہا ہے۔نئے فیچر کے حوالے سے کام مکمل کرلیا گیا ہے اور فیس بک کی جانب سے جلد ہی اسے متعارف کروا دیا جائے گا۔

اس ری برانڈنگ کے تحت واٹس ایپ اور انسٹا گرام کے نام بھی تبدیل ہوجائیں گے۔ دونوں ایپس کو اب ’’واٹس ایپ فرام فیس بک ‘‘ اور ’’انسٹاگرام فرام فیس بک ‘‘ کے نام سے پہچانا جائے گا۔

فیس بک کی جانب سے واٹس ایپ اور انسٹاگرام کی ملکیت حاصل کرنے کے بعد سے یہ تینوں ایپس علیحدہ علیحدہ استعمال کی جا رہی تھیں لیکن ان نئے ناموں سے واضح ہو گا کہ یہ فیس بک کی ملکیت ہیں۔

گوگل پلے اور ایپ سٹور میں انسٹا گرام اور واٹس ایپ نئے ناموں سے نظر آئیں گے لیکن ڈیوائس کی ہوم اسکرین پر موجودہ نام ہی دکھائی دے گا۔

فیس بک انتظامیہ اعلان کرچکی ہے کہ نئے فیچرزکی اہم خصوصیت یہ ہوگی کہ صارفین ایک ہی ایپ پر رہتے ہوئے اپنی پوسٹ یا تصاویر وغیرہ شیئر کرنے فیس بک اور دونں ایپس استعمال کرسکیں گے۔

فی الحال فیس بک استعمال کرنا ہو تو صارفین کو واٹس ایپ بند کرنا پڑتا ہے جبکہ انسٹاگرام پر جانے کے لیے بھی فیس بک کلوز کرنا پڑتی ہے لیکن نئے فیچرکے بعد فیس بک پر رہتے ہوئے واٹس ایپ اور انسٹاگرام کو بھی ایک ساتھ ہی استعمال کیا جاسکے گا۔

اسی طرح سے واٹس ایپ پر رہتے ہوئے فیس بک کو استعمال کیا جاسکے گا لیکن ابھی یہ واضح نہیں کہ واٹس ایپ پر رہتے ہوئے انسٹاگرام بھی استعمال کیا جا سکے گا یا نہیں۔

فیس بک انتظامیہ کے مطابق اب جلد ہی واٹس ایپ اور انسٹاگرام صارفین کو ان ایپس پر رہتے ہوئے فیس بک استعمال کرنے کا فیچر دکھائی دے گا۔ اسی طرح سے فیس بک صارفین کو وہیں رہتے ہوئے واٹس ایپ اور انسٹاگرام استعمال کرنے کا فیچر دکھائی دے گا۔

فیس بک کے بانی مارک زکربرگ کے مطابق اب صارفین انسٹاگرام کے ڈائریکٹ میسج سے واٹس ایپ چیٹ میں پیغام بھیج سکیں گے۔ ان دونوں ایپس کو فیس بک کے ساتھ ضم کرنے کا مقصد ایسا پلیٹ فارم بنانا ہے جہاں صارفین کی نجی زندگی کا تحفظ اہم ترین ہو۔

اس حوالے سے لکھے جانے والے ایک مضمون میں مارک زکر برگ نے بتایا کہ صارفین کی خواہش ہے کہ سماجی رابطے کا جو پلیٹ فارم استعمال کر رہے ہوں اسی سے دوسروں کو پیغام بھیجیں۔ ہم صارفین کو موقع دینا چاہتے ہیں کہ وہ دوستوں سے رابطے میں رہنے کیلئے جس ایپلی کیشن کو بھی ترجیح دیتے ہیں اسے منتخب کرلیں۔

امکان ہے کہ فیس بک انتطامیہ آئندہ چند ہفتوں میں نئے فیچر کی آزمائش شروع کردے گی۔ ابتدائی طور پر اسے امریکا و یورپ میں اور ممکنہ طور پر رواں سال کے اختتام یا سال 2020 کی شروعات میں مکمل طور پر متعارف کروا دیا جائے گا۔