مجرموں کو پکڑنے کیلئے روبوٹ اہلکار استعمال ہونگے

May 15, 2019

چین کے صوبے ژیوائن میں جدید ٹیکنالوجی کو استعمال کرتے ہوئے پولیس میں روبوٹ اہل کار بھرتی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

دور جدید میں روبوٹس کا استعمال کئی شعبوں میں عام ہوگیا ہے۔ روبوٹس نے جہاں انسانوں کے بہت سے کام اپنے سر لے لئے ہیں وہیں چین میں روبوٹس نے پولیس اہلکاروں کی ذمہ داریاں سنبھال لی ہیں۔

چین کے صوبے ژیوائن کے شہر فوژو میں پولیس کی جانب سے فوجیئن نامی پولیس روبوٹ متعارف کروایا گیا ہے جو نہ صرف پولیس آفیسرز کے فرائض انجام دیگا بلکہ ٹریفک کی روانی برقرار رکھنے، سیاحوں کی رہنمائی سمیت قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں پر نظر بھی رکھے گا۔

شہر کے سیاحتی مقام پر تعینات کئے گئے اس پولیس روبوٹ میں ایک کیمرہ لگا ہوا ہے جو 360 ڈگری تصاویر لے گا۔

صرف یہ ہی نہیں بلکہ یہ اہل کار روبوٹ اپنی حاصل کردہ معلومات موبائل ایپ کے ذریعے پولیس اہلکار کو فراہم بھی کرے گا اور یوں وہ قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے افراد کو بروقت پکڑ سکیں گے۔

چینی پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ابتدا میں چھ ماہ تک اس روبوٹ کو آزمائشی بنیادوں پر استعمال کیا جائے گا، جس کے بعد تجربہ کامیاب ہونے پر ایسے مزید روبوٹس پولیس کی معاونت کیلئے بنائے اور بھرتی کیے جائیں گے۔