سولر پینل اوربیڑی سے چلنےوالے ماحول دوست چولہے

سولر پینل اوربیڑی سے چلنےوالے ماحول دوست چولہے

Saman Khan
August 3, 2018

دُھواں چھوڑے نہ ہی صحت کو نقصان پُہنچائے،کھانا بھی جھٹ پٹ بنائے۔دیہی خواتین کوجدید چولہے مُہیا کرکے اُن کی زندگی آسان بنادی گئی ۔ یہ منصوبہ  محکمہ سوئی گیس اور ڈبلیو ڈبلیو ایف نے ملکر بنایا ہے۔

لاہور سے تقریبا ساٹھ کلومیٹر دور ایک گاؤں ایسا ہےجس کے لوگ ماحول سے دوستی کررہے ہیں ۔ ماحول سےاپنا رشتہ نبھانے کے لئے وہ فصلوں کی باقیات کو جلائیں گے نہ ہی صنعتی کچرے کونذرآتش کریں گے۔ انھوں نےاس کا متبادل انتظام کرلیاہے۔

قصورروڈ پرگاؤں میاں والاسرکاری گیس کی پُہنچ سے دور ہےلیکن اب اُپلوں کے روایتی چولہوں سے یہاں کی خواتین کی جان خلاصی ہوتی دکھائی دے رہی ہے۔

سولر شیٹ اور بیٹری سے چلتا چولہا، جس میں فالتو زرعی مواد یا زرعی صنعتوں کا کچرا جلا کر گیس حاصل کی جانے لگی ہے۔

سوئی ناردرن گیس پائپ لائنزاور ورلڈ وائڈ فنڈ فارنیچرنےمُقامی کاریگروں کو پہلےگیس فائیر نامی یونٹ بنانے سکھائے اورپھرتربیتی ورکشاپس کےبعد5سو 26 گھروں میں یہ چولہے تقسیم کئے گئے۔

یہاں کے لوگوں کو مُتبادل توانائی کے استعمال کے ساتھ درخت لگانے کی ترغیب بھی دی جا رہی ہے۔