Saturday, October 24, 2020  | 6 Rabiulawal, 1442
ہوم   > ٹیکنالوجی

موبائل سے نکلنے والی شعاعیں کتنی خطرناک؟؟

SAMAA | - Posted: May 27, 2018 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: May 27, 2018 | Last Updated: 2 years ago

کیا آپ کے موبائل سے نکلنے والی لائٹ یا شعاعیں بہت تیز ہیں ؟؟ کیا آپ انہیں اکثر غور سے دیکھتے ہیں؟؟ اگر ایسا ہے تو پھر یہ خطرے کی بات ہے۔ ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ اسمارٹ فونز اور ایل ای ڈیز سے نکلنے والی نیلی روشنی انسانی صحت کے لیے انتہائی نقصان دہ ہے، یہ بلیو لائٹس بریسٹ کینسر کا سبب بھی بنتی ہیں۔

بارسلونا انسٹی ٹیوٹ فار گلوبل ہیلتھ کے محققین نے 11 خطوں کے 4 ہزار افراد پر تحقیق کے بعد یہ نتیجہ اخذ کیا کہ گھروں کے اندر اور باہر ایل ای ڈی سے نکلنے والی نیلی روشنی کینسر جیسے جان لیوا مرض کو بڑھانے کا بڑا ذریعہ ہیں۔

تحقیقی میں یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ اسمارٹ فونز کی روشنی خارج ہونے سے اگر میلاٹونین کی مقدار متاثر ہو تو نہ صرف ڈپریشن بلکہ موٹاپے کا خطرہ بھی بڑھ جاتا ہے۔

اسی طرح رات کو اسمارٹ فون کی روشنی اور نیند متاثر ہونے سے مثانے کے کینسر میں مبتلا ہونے کے خطرے کا تعلق سامنے آیا ہے۔ تحقیق کے مطابق الیکٹرانکس ڈیوائسز سے نکلنے والی شعاعیں انسانی جسم میں موجود گھڑی پر اثر انداز ہوتی ہیں بالخصوص ایسے افراد جو لمبی نیند کے لیے اسے استعمال کرتے ہیں۔

یہ اُن ہارمونز کو نشانہ بناتی ہیں جو کینسر کا سبب بنتے ہیں۔ یہ شعاعیں گھر اور اسٹریٹ لائٹس میں استعمال ہونے والی ایل ای ڈی لائٹ سے بھی نکلتی ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube