Friday, September 25, 2020  | 6 Safar, 1442
ہوم   > ٹیکنالوجی

ماحولیاتی تبدیلیوں سے گلیشیئر سکڑنے لگے

SAMAA | - Posted: Jul 16, 2017 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA |
Posted: Jul 16, 2017 | Last Updated: 3 years ago

تبت : ماہرین کا کہنا ہے کہ دنیا کی چھت گرم اور سرد ترین ہوتی جا رہی ہے، سائنسدانوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ آنے والے دنوں میں زہریلی گیسوں کا اخراج دنیا کیلئے مشکلات کا سبب بنے گا۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ماحولیات پر تحقیق کرنے والی چینی سائنسدانوں کی...

تبت : ماہرین کا کہنا ہے کہ دنیا کی چھت گرم اور سرد ترین ہوتی جا رہی ہے، سائنسدانوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ آنے والے دنوں میں زہریلی گیسوں کا اخراج دنیا کیلئے مشکلات کا سبب بنے گا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ماحولیات پر تحقیق کرنے والی چینی سائنسدانوں کی ٹیم نے دعویٰ کیا ہے کہ سطح سمندر سے قریباً تین ہزار سے لے کر پانچ ہزار میٹر کی بلندی پر واقع سطح مرطفع چنگ ہائی تبت جسے دنیا کی چھت بھی کہا جاتا ہے۔

2015-Orient-Tibet-Roof-of-the-World-SS-Hero

سخت ترین ماحولیاتی تبدیلیوں کے باعث گرم ترین اور سرد ترین ہوگئی ہے۔

tibet-everest-full

سائنسدانوں کے مطابق اس سطح مرتفع پر کئی گلیشیئر ہیں اور کئی اہم دریا نکلتے ہیں۔ سائنسدانوں کا کہان ہے کہ شدید ماحولیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے سطح مرتفع پر موجود جھیلیں پھیلتی جا رہی ہیں جبکہ گلیشئر سکڑتے جا رہے ہیں جس سے سانحات کے خطرات بڑھ رہے ہیں۔

SONY DSC

سائنسدانوں کی نئی تحقیق کے مطابق اعداد وشمار سے ہمیں پتہ چلتا ہے کہ زہریلی گیسوں کا اخراج اب بھی عالمی حدت میں اضافے کی ایک بڑی وجہ ہےجس کی وجہ سے سطح مرتفع کو زیادہ سرد ترین اورگرم ترین ہونے سے روکنے کےلئے کوئی طریقہ نہیں ہے۔ سماء

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube