Saturday, September 25, 2021  | 17 Safar, 1443

پاکستان کرکٹ ٹیم کے ورلڈ کپ ٹی 20 کیلیےغیرملکی کوچزکا اعلان

SAMAA | - Posted: Sep 13, 2021 | Last Updated: 2 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 13, 2021 | Last Updated: 2 weeks ago

پاکستان کرکٹ بورڈ کے نومنتخب چئیرمین رمیض راجہ نے اعلان کیا ہے کہ میتھیوہیڈن اور ورنن فلینڈر ٹی 20 ورلڈکپ میں پاکستان کے کوچز ہونگے۔

لاہور میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے نومنتخب چئیرمین رمیض راجہ نے اپنی پہلی پریس کانفرنس میں بتایا کہ اگلے ماہ متحدہ عرب امارات میں ہونے والے ٹی 20 ورلڈ کپ میں پاکستان کے کوچ میتھیووہیڈن اور ورنن فلینڈر ہونگے۔ میتھیوہیڈن آسٹریلیاء کو سابق اوپننگ بیٹسمین ہیں جبکہ فلینڈر کا تعلق جنوبی افریقا سے ہے اور ان کا ریکارڈ بطور فاسٹ بالر انتہائی شاندار رہا ہے۔

رمیض راجا نے کہا کہ سابق کوچ مصباح الحق اور وقار یونس نے دیانت داری کے ساتھ کام کیا۔ بورڈ میں سابق کرکٹرز کا کردار اہم ہوتا ہے اور کرکٹ میں بہتری کے لیے مشورے درکار ہونگے اور پاکستان کرکٹ کو آگے لے کر جائیں گے۔

اپنے ویژن سے متعلق انھوں نے بتایا کہ کرکٹ بورڈ کی کارکردگی ٹیم کی کارکردگی سے منسلک ہے۔پاکستان کرکٹ ٹیم کی کوچنگ میں بہتری لانا ہوگی اور ٹیلنٹ کومزید بہتر کرنا ہوگا۔ رمیض راجہ نے کہا کہ فرسٹ کلاس کرکٹ میں بہتری لائیں گے اورتیکنیک کو درست کرنے پرکام کرنا ہوگا۔

نومنتخب چئیرمین کا کہنا تھا کہ پاکستان میں پچز کی تیاری پرکام کرنا ضروری ہے کیوں کہ کرکٹ میں پچز شہ رگ کا درجہ رکھتی ہیں۔

ورلڈ کپ سے متعلق انھوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر ٹیم سلیکشن کے حوالے سے بہت رائے موجود ہے تاہم جو ٹیم سلیکٹ کرلی گئی ہے اس کوسپورٹ کرنا ہے۔نوجوانوں کو ٹیم میں شامل کرنا اہم ہے اور قیادت اگر موزوں ہے تو ٹیم کو چلانا مشکل نہیں ہوتا۔

مزید اہم اعلانات کرتے ہوئے رمیض راجہ نے بتایا کہ 192 فرسٹ کلاس کھلاڑیوں کا ماہانہ مشاہرہ ایک لاکھ روپے بڑھادیا ہے اور اس سےکھلاڑیوں میں اعتماد آئے گا۔

پیر 13ستمبر کو پی سی بی بورڈ آف گورننگ کا اجلاس ہوا جس کی صدارت الیکشن کمشنر جسٹس ریٹائرڈ عظمت سعید نے کی۔ اجلاس ميں 36ویں پی سی بی چيئرمين کا انتخاب کيا گیا۔

وزیراعظم کے 2منتخب ممبران، 4آزاد اراکین اور چیف ایگزیکٹو وسیم خان اجلاس میں شریک ہوئے۔ وہ آئندہ تین سال کے لیے پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین بنے ہیں۔

پی سی بی کے پیٹرن اور وزیراعظم عمران خان نے27 اگست کو رمیز راجہ کے علاوہ اسدعلی خان کو تین سال کے لیے پی سی بی کے بورڈ آف گورنرز کا رکن نامزد کیا تھا۔ ان کے علاوہ عاصم واجد جواد، عالیہ ظفر، عارف سعید، جاوید قریشی اور وسیم خان (چیف ایگزیکٹو پی سی بی) بھی بورڈ آف گورنرز کا حصہ ہیں۔

اس سے قبل احسان مانی پی سی بی کے چیئرمین تھے اور اپنی مدت پوری کرنے کے بعد انہوں نے عہدے پر مزید تین سال کام کرنے سے معذرت کرلی تھی۔

سابق کپتان رمیز راجہ چوتھے پاکستانی کرکٹر ہیں جو پی سی بی کے چیئرمین منتخب ہوئے ہیں۔ان  سے قبل سابق کپتان عبدالحفیظ کاردار (77-1972)، جاوید برکی (95-1994) اور اعجاز بٹ (11-2008) چیئرمین پی سی بی کا عہدہ سنبھال چکے ہیں۔

پیر کو لاہور میں پی سی بی ہیڈکوارٹرمیں بورڈ آف گورنرز کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے نومنتخب چئیرمین رمیز راجہ نے کہا کہ سب کے ساتھ مل کر کام کرنے کا منتظر ہوں تا کہ پاکستان کرکٹ کو میدان کے اندراور باہر دونوں مقامات پر مضبوط  کریں اور پڑوان چڑھائیں۔

انھوں نے بتایا کہ پہلی ترجیح قومی کرکٹ ٹیم میں اُس سوچ، ثقافت اور نظریے کو متعارف کروانا ہے کہ جس نےکبھی پاکستان کو کرکٹ کی سب سے  خطرناک ٹیم بنادیا تھا۔ رمیض راجہ کا کہنا تھا کہ ایک ادارےکی حیثیت سے ہم سب کو قومی کرکٹ ٹیم کے شانہ بشانہ کھڑے ہونے اور ان کی مطلوبہ ضروریات کوپورا کرنے کی ضرورت ہے تاکہ وہ اسی برانڈ کی کرکٹ کھیلیں کہ جس کی ان سے شائقین کرکٹ توقع کرتے ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
Vernon Philander,Ramiz Raja,Mathew Hayden,PCB,Pakistan Cricket Board
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube