Wednesday, September 22, 2021  | 14 Safar, 1443

ٹوکیو اولمپکس:مینز،ویمنز فٹبال سیمی فائنل مرحلے میں

SAMAA | - Posted: Aug 1, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 1, 2021 | Last Updated: 2 months ago

ٹوکیو اولمپکس میں منیز اور ویمنز فٹبال ایونٹس سخت و دل چسپ مقابلوں اور اپ سیٹ کے بعد اب میڈلز کی دوڑ یعنی سیمی فائنل مرحلے میں داخل ہو گئے ہیں۔ چار بار اولمپک گولڈ میڈل جیتے والی  ورلڈ چیمپئن اور عالمی نمبر ایک امریکی ویمنز  فٹبال ٹیم پیر دو اگست کو کاشیما میں سیمی فائنل میں عالمی نمبر 8  کینیڈا کے مدمقابل ہو گی جبکہ دوسرا سیمی فائنل یوکوہاما میں عالمی نمبر 5  سویڈن  اور عالمی نمبر 9  آسٹریلیا کے مابین کھیلا جائے گا۔ امریکہ اور کینیڈا کی ٹیمیں سن 2008  کے بیجنگ اولمپکس میں کوارٹر فائنل میں ٹکرائی تھیں جس میں امریکہ نے اضافی وقت میں کینیڈا کو 2-1 سے زیر کیا تھا۔

 مینز فٹبال میں پہلا سیمی فائنل  دفاعی چیمپئن برازیل اور میکسیکو  کے مابین منگل  3 اگست کو کاشیما میں ہوگا جبکہ اسی روز سائٹاما میں دوسرے سیمی فائنل میں میزبان جاپان اور اسپین کی ٹیمیں آمنے سامنے ہوں گی۔

مردوں کے کوارٹر فائنل میں برازیل نے  سخت مقابلے کے بعد مصر کو 1-0 سے شکت دے کر سیمی فائنل میں رسائی کی۔ دفاعی چیمپئن بازیل کو مصری فٹبالرز کی جانب سے سخت مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا اور میچ کے آغاز سے ہی مصری   فٹبالرز نے  فیورٹ برازیلین  کیلئے مشکلات پیدا کیں۔ مصر کی دفاعی لائن  کو توڑنا برزیلین فارورڈ لائن کے لیے خاصا دشوارہو گیا تھا۔ باصلاحیت اور تجربہ کار برازیلی کھلاڑیوں نے کئی اچھی مووز بنائیں لیکن وہ گول کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکے۔ مصری فٹبالرز نے بھی جوابی حملے کیے۔ اولمپک  فٹبال میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے برازیلی سپر اسٹار ریچارلیسن  نے ایک بار پھر ٹیم کی کامیابی میں مرکزی کردار ادا کیا اور کھیل کے 37 ویں منٹ میں ایک اچھی موو کے نتیجے میں ساتھی کھلاڑی میتھائس کونا کو  باکس ایریا میں پاس دیا جنہوں  نے گیند کو مصری گول پوسٹ میں پہنچانے میں کوئی غلطی نہیں کی اور برازیل کو ایک گول کی برتری دلوا کر فتح کی جانب گامزن کیا۔ مصری فٹبالرز نے تیزی کے ساتھ جوابی حملہ کیا لیکن حریف ٹیم کا مضبوط دفاعی حصار ان کی راہ میں حائل رہا۔ پہلا ہاف برازیل کی ایک گول سے برتری پر ختم ہوا۔

 ایک اورکوارٹر فائنل میں ہسپانوی ٹیم نے آئیوری کوسٹ کو  اضافی وقت میں 5-2 سے ہرا کر  سیمی فائنل میں جگہ بنائی۔  اسپین نے شکست کے جبڑوں سے فتح کوکشید کیا اور 20 سال بعد سیمی فائنل میں رسائی کرنے میں کامیابی حاصل کی۔ اس جیت میں متبادل کھلاڑی رفا میر نے مرکزی کردار ادا کیا۔ میچ کے دوسرے ہاف میں آئیوری کوسٹ کے خراب دفاع کی وجہ سے اسپین کو میچ اضافی وقت میں لے جانے کا موقع ملا جب انجری ٹائم میں ہسپانوی رفا میر نے گول کر کے اسکور 2-2 سے برابر کر دیا اور اپنی ٹیم کو یقینی شکست سے بچا لیا۔ اس کے بعد ہسپانوی فٹبالرز  نے آئیوری کوسٹ کو اضافی وقت میں سنبھلنے کا موقع نہیں دیا اور مکمل طور پر چھائے رہے۔ رفا میر نے اضافی وقت میں مزید دو گول کر کے اپنی ہیٹ ٹرک مکمل کی۔

آئیوری کوسٹ کے فٹبالرز نے میچ  کے آغاز سے ہی ہسپانوی  ٹیم کو دباؤ میں رکھا تھا اوروہ  اپنے روایتی اٹیکنگ کھیل  سے گول پر حملے کررہے تھے جس کے نتیجے میں 10 ویں منٹ میں ایرک بیلی نے گول کر کے آئیوری کوسٹ کو ایک گول کی سبقت دلوا دی تھی۔  ایک گول سے خسارے میں جانے کے چھوٹے پاسز کے ذریعے مووز بنانے والے ہسپانوی فٹبالرز نے کھیل میں کچھ تیزی دکھائی اور اچھی مووزبنا کر گیند کو کئیبار مخالف ٹیم کے ہاف میں لے جانے میں کامیاب ہوئے مگر آئیوری کوسٹ کے دفاعی حصار کو توڑنا ان کیلئے جوئے شیر لانے کے مترادف تھا لیکن 30 ویں منٹ میں اسپین کے اولمو نے گول کر کے مقابلہ 1-1 سے برابر کر دیا۔ پہلا ہاف اسی اسکور پر ختم ہوا۔

دوسرے ہاف بھی  دونوں ٹیمیں سرتوڑ کوششوں کے باوجود گول کرنے میں کامیاب نہیں ہوئی تھیں اور میچ انجری ٹائم میں تھا جب آئیوری کوسٹ کے میکس ایلن گراڈل نے 91 ویں منٹ میں گول کر کے  اسکور 2-1 کر دیا اور اس موقع پر افریقی ٹیم کی جیت یقینی دکھائی دے رہی تھی اور آئیوری کیمپ میں خوشی کی لہر دوڑگئی تھی لیکن ڈیڑھ منٹ بعد جوابی حملے متبادل کھلاڑی رفا میر نے  اسپین کی جانب سے گول کر کے مقابلہ 2-2 سے برابر کر دیا اور اس کے ساتھ ہی وسل بج گئی اور میچاضافی وقت میں چلا گیا۔ اضافی وقت میں بھی آئیوری فٹبالرز نے بہترین کارکردگی دکھائی اٹیک کرنے کے ساتھ دفاع بھی کیا۔ اسیین کے مائیکل ائیرزابل نے 98 ویں نٹ میں پنالٹی کک پرگرل کر کے سبقت 3-2 کر دی۔  مقررہ وقت کے آخری لمحات کی طرح اضافی وقت کے آحر میں بھی آئیوری  دفاع تساہل کا شکار نظر آیا جس کا بھرپور فائدہ اٹھاتے ہوئے رفا میر نے117 ویں اور 121 ویں منٹ میں دو گول کر کے ناصرف اپنی ہیٹ ٹرک مکمل کی بلکہ اسپین کو میڈلز کی دوڑ میں لے گئے۔

 میکسیکو اورر جنوبی کوریا کے کوارٹر فانئل میچ میں مقررہ وقت  9 گول ہوئے۔ میکسیکو کی ٹیم میچ کے آغاز سے ہی کورین کھلاڑیوں پر بالادست رہی۔جنوبی کوریا کی دفاعی لائن  برق رفتار میکسیکن فٹبالرز کوروکنے میں ناکام رہے۔ پہلے ہاف کے 12 ویں منٹ میں میکسیکو کے  ہنری مارٹن نے گول کر کے ٹیم کو برتری دلوائی جس کو جاپان کے لی ڈونگ نے 20 ویں منٹ میں گول کر کے برابر کر دیا۔ میکسیکو کے فٹبالرز نے زیادہ جارحانہ اندازاختیار کیا ہوا تھا جس کی وجہ سے انہیں زیادہ مواقع میسر آرہے تھے۔ میکسیکوکے رومو نے 30 ویں اور 39 ویں منٹ میں کارڈووا نے گول کیا۔ پہلا ہاف میکسیکو کی  3-1 سے  سبقت پر ختم ہوا۔

دوسرے ہاف میں  جنوبی کورین فٹبالرز نے اچھی کارکردگی دکھاائی اور 51 ویں منٹ میں لی ڈونگ نے ایک اورگول کرکے اسکور 3-2 کر دیا لیکن میکسکو  کے مارٹن نے 54 ویں، کارڈووا نے 63 ویں منٹ میں گوول کر کے کورین فٹبالرز کے حوصلے پست کردیئے۔ 84ویں منٹ میں ایڈورڈ  ایگوائرنے بھی گول داغ دیا اور اسکور 6-2 پر پہنچا کر اپنی ٹیم کی سیمی فائنل میں رسائی یقینی بنا دی۔  انجری ٹائم 91 ویں منٹ میں کوریا کے ہوانگ جو نے تیسرا گول کیا۔

 میزبان جاپان اور نیوزی لینڈ کے مابین کوارٹر فائنل میں دونوں ٹیموں کے فٹبالرز نے زیادہ تر دفاعی اندازاپنایا جس کی وجہ سے مقرررہ اور اضافی وقت میں میچ بغبر کسی گول کے برابر رہا اور میچ ما فیصلہ پنالٹی ککس پر ہوا جس میں جاپان نے نیوزی لینڈ کو 4-2 سے شکست دی۔ جاپان کی جانب سے چار پنالٹی ککس پر ایسی اوئیڈا، کوایٹاکورا، ناکایاما اور یوشیدا نے گول کیے۔ جبکہ نیوزی لینڈ کرسٹوفر وڈ نے پہلی ٹنالٹی کک پرگول کیا جبکہ لبرٹر کاکاسی اور کلیٹن لوئیس کی پنالٹی کک ضائع ہو گئیں اور چوتھی کک پر میکواٹ نے گول کیا۔

ویمنز کوارٹر فائنل میں امریکی خواتین ٹیم  پنالٹی شوٹ آؤٹ پر ہالینڈ کو 2-4 سے ہرا کر سیمی فائنل میں کوالیفائی کیا۔ مقررہ  وقت  مقابلہ 2-2  گول سے برابر تھا اور اضافی وقت میں کوئی بھی ٹیم گول کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکی تھی۔ مقررہ وقت میں ہالینڈ کی میڈیما نے 16 ویں اور 54 ویں منٹ میں گول کیے جس کے ساتھ ٹوکیو اولمپکس میں میڈیما کے گولز کی تعداد 10 ہو گئی۔ امریکہ کی سمانتھا موئیس نے 28 ویں اور لین ولیمز میں 31 ویں منٹ میں گول کیا۔

 امریکہ کے خلاف مقررہ وقت میں 2 گول کرنے والی  ڈچ اسٹار میڈیما پہلی پنالٹی کک پر گول نہیں کر پائی۔ ہالینڈ کی جانب سے اینک نوون کی پنالٹی بھی ضائع ہوئی جبکہ پنالٹی ککس امریکہ کی چاروں فٹبالرز کیتھلین لویل‘ الیگرینڈرا مورگن کراسو‘ کرسٹین پریس اور میگن ریپینوئی نے ایک ایک گول کیا۔

امریکی ٹیم کو سب سے زیادہ چار گولڈ میڈل جیتنے کا اعزاز حاصل ہے۔ امریکی فٹبالرز نے سن 1996، سن 2004، سن 2008 اور سن 2012 میں گولڈ میڈل جیتے تھے۔ سن 2000 میں امریکی ٹیم نے سلور میڈل حاصل کیا تھا جب اسے ناروے نے فانئل میں شکست دی تھی۔

 دوسری جانب کینیڈا نے انتہائی سخت مقابلے کے بعد ویمنز فٹبال کوارٹر فانئل میں فیورٹ برازیل کو پنالٹی ککس پر 3-4  سے شکست دے کر سیمی فائنل میں رسائی کی۔ دونوں ٹیموں کی فٹبالرز نے مقررہ اور اضافی وقت میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور ان کی گول کرنے کی کوششیں کامیابی سے ہم کنار نہیں ہو سکیں۔ پنالٹی ککس میں کینیڈا کی ٹیم  حاوی رہی۔ کینیڈین گول کیپر اسٹیفنی لیبی نے بہترین اندنز میں گول پوسٹ کی حفاظت کی اور برازیلین کھلاڑیوں کے کئی یقینی مواقع کو روکا۔ اضافی وقت کے آخری لمحات میں بھی لیبی نے ایک حملے کو ناکام بناتے ہوئے فضا میں اچھل کر گیند کو پکڑا تو وہ سلائیڈ کرنے والی برازیلین فٹبالر سے گر گئی  گئی تھی جس کی وجہ سے وہ کچھ دیر تک گراؤنڈ میں درد سے کراہتی رہی اور طبی امداد ملنے کے بعد دوبارہ گول پوسٹ میں کھڑی ہو گئی۔

 کینیڈا کی کپتان سنکلیئر نے پہلی پنالٹی کک لگائی جو برازیلین گول کیپر نے روک لی جس سے برازیل کو ایڈوانٹیج حاصل ہو گیا۔ برازیل کی جانب سے اسٹار  فٹبالر مارٹا‘ ڈیبورا اولیورا اور ایریکا سانتوس نے پنالٹی ککس پر گول کیے جبکہ چوتھی اور پانچویں پنالٹی ککس پر برازیلین کھلاڑی اینڈریسا ڈی سلوا اور رفائل کاروالہو گول نہیں کر پائیں۔ چار پنالٹی ککس پر کینیڈا کی جیسی فلیمنگ، ایشلے میری، ایڈریانا لیون اور وینیسا نے گول کی اور اپنی ٹیم کو سیمی فائنل میں پہنچانے کا کارنامہ انجام دیا۔ کینیڈا کی ویمنز فٹبال ٹیم نے سن 2012 اور سن 2016 کے اولمپکس میں کانسی کے تمغے جیتے ہیں۔

 ریو اولمپکس کی رنرز اپ سویڈن کی ٹیم میزیان جاپان  کے خلاف مکمل طور پر حاوی رہی اور اس نے مقررہ وقت میں میچ 1-3  کے مارجن سے جیت لیا۔ سویڈن نے انتہائی برق رفتاری سے جاپان کے خلاف برتری حاصل کی جب ساتویں منٹ میں  میگڈالینا ایرکسن نے گول کیا۔ جاپانی ٹیم متعدد اچھی مووز کے بعد 22 ویں منٹ میں مینا تناکا کے گول کی وجہ سے اسکور برابر کرنے میں کامیاب ہوئی  اور پہلے ہاف کوئی بھی ٹیم مزید گول نہ کر پائی۔  دوسرے ہاف میں تجربہ کار سویڈش فٹبالرز نے جارحانہ کھیل پیش کرتے ہوئے جاپانی گول پوسٹ پر حملے کیے اور ان کی کوششیں جلد ہی  رنگ لے آئی جب 53 ویں منٹ میں  ایما بلیک سٹینیئس  نے گیند کو جاپانی گول پوسٹ میں پہنچا کر سبقت دلوا دی۔ سویڈن کی جانب سے تیسرا گول کوسوویرا ایسلانی نے کیا تھا۔

آسٹریلیا نے اضافی وقت میں برطانیہ کی خواتین ٹیم کو 3-4 سے ہرا کر پہلی بار سیمی فائنل کھیلنے کا اعزاز حاصل کیا۔  برطانیہ کی جانب سے تینوں گول  ایلین وائٹ نے کیے اور ہیٹ ٹرک کی جبکہ آسٹریلیا کی جانب سے سمانتھا کیئر نے 2، الانہ کینیڈی  اور میری فولر نے ایک ایک گول کیا تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube