Friday, January 21, 2022  | 17 Jamadilakhir, 1443

بابراعظم نےسیشن جج کافیصلہ لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا

SAMAA | - Posted: Mar 20, 2021 | Last Updated: 10 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 20, 2021 | Last Updated: 10 months ago

فوٹو: ٹوئٹر

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابراعظم نے ایڈیشنل سیشن جج کا مقدمے کے اندراج سے متعلق فیصلہ لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا۔

لاہور کے ایڈیشنل سیشن جج نے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کو حکم دیا تھا کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابراعظم کیخلاف بلیک میلنگ، دھمکی آمیز اور نامناسب پیغامات بھیجنے کے الزامات پر مقدمہ درج کیا جائے۔

لاہور ہائیکورٹ میں بابراعظم کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں ایف آئی اے اور حامیزہ مختار کو فریق بنایا گیا ہے جبکہ درخواست میں کہا گیا ہے کہ ایف آئی اے نے مقدمہ درج کرنے سے قبل ان کا مؤقف نہیں سنا۔

قومی کرکٹر بابراعظم کيخلاف مقدمہ درج کرانے کی درخواست حامیزہ مختار نے دی تھی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بابراعظم بھی انکوائری میں شامل نہیں ہوئے اور ان کی جگہ ان کے بھائی فیصل اعظم پیش ہوئے اور بابر کے پیش ہونے کیلئے مہلت طلب کی۔

ایف آئی اے رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ مہلت کے باوجود بابر اعظم تاحال انکوائری میں شامل نہیں ہوئے اور اپنا بیان بھی ریکارڈ نہیں کروایا، اس معاملے میں وہ قصور وار پائے گئے ہیں۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ سلیمہ بی بی نے 3 نوٹسز وصول کرنے کے باوجود اپنا بیان ریکارڈ نہیں کروایا، مریم احمد انکوائری میں شامل ہیں لیکن مدعیہ کو پہچاننے سے انکار کردیا تھا۔ مریم احمد نے اپنے نمبر سے مدعیہ کو نازیبا میسجز کرنے سے انکاری کا بیان بھ دیا اور جب مریم احمد کو موبائل فرانزک کیلئے جمع کرانے کا کہا گیا تو انھوں نے انکار کردیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube