Tuesday, December 7, 2021  | 2 Jamadilawal, 1443

سلیکشن پرناراض کھلاڑیوں کاملک چھوڑنےکا فیصلہ

SAMAA | - Posted: Nov 19, 2020 | Last Updated: 1 year ago
SAMAA |
Posted: Nov 19, 2020 | Last Updated: 1 year ago

فوٹو: سماء ڈیجیٹل

پی ایس ایل میں لاہور قلندرز اور کراچی کنگز کی نمائندگی کرنے والے محمد عرفان جونئیر کے آسٹریلیا جانے کے اعلان کے بعد اب قومی ٹیسٹ ٹیم کے اوپنر سمیع اسلم نے مسلسل نظر انداز کیے جانے پر ڈومیسٹک کرکٹ سیزن ادھورا چھوڑ کر بیرون ملک جانے کا فیصلہ کرلیا۔

سمیع اسلم نے ڈومیسٹک کرکٹ سیزن ادھورا چھوڑ کر امریکا جانے کا فیصلہ کیا ہےجس کے باعث سمیع اسلم قائد اعظم ٹرافی کے چوتھے مرحلے سے بلوچستان کی ٹیم کو دستیاب نہیں ہوں گے۔

سمیع اسلم نیوزی لینڈ کے خلاف 35 رکنی اسکواڈ میں جگہ نہ بناپانے پر دلبرداشتہ تھے، سمیع نے آخری لمحات تک بیرون ملک جانے کے فیصلے سے بورڈ حکام کو لاعلم رکھا۔

قائد اعظم ٹرافی میں بلوچستان کی نمائندگی کرنے والے ٹسٹ کرکٹر نے ای میل کے ذریعے ٹیم انتظامیہ کو آگاہ کیا جبکہ فیصلے سے متعلق پی سی بی حکام کو بتادیا ہے۔

سمیع اسلم قومی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کی نمائندگی کرتے ہوئے 13 ٹیسٹ میچز کھیل چکے ہیں جس میں انہوں نے 758 رنز بنائے جبکہ 31.58 کی ایورج رہی۔

ون ڈے میں قومی کرکٹ ٹیم کی 4 میچوں میں نمائندگی اور 19.50 کی اوسط سے صرف 78 رنز بنائے ہیں تاہم فرسٹ کلاس کرکٹ میں نوجوان بلےباز نے 76 ٹیسٹ میچوں کی 128 اننگز میں 4594 رنز بنائے جس میں انکی اوسط 37.96 تھی۔

سمیع اسلم نے 2015 میں بنگلادیش کیخلاف ٹیسٹ ڈیبیو کیا جبکہ 2017 میں سری لنکا کیخلاف آخری میچ کھیلا۔

اس سے قبل عرفان جونیئر نے گزشتہ سیزن میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا تاہم سلیکشن پر وہ نالاں تھے جس کے بعد انہوں نے ڈومیسٹک سیزن کھیلنے کے بجائے انہوں نے آسٹریلیا میں کلب کرکٹ کھیلنے کا فیصلہ کیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ ننکانہ صاحب میں پیدا ہونے والے 25 سالہ فاسٹ بولر اب تک22 فرسٹ کلاس میچوں میں 80 وکٹیں حاصل کر چکے ہیں، انہیں پاکستان سپر لیگ میں کراچی کنگز، ملتان سلطانز، کوئٹہ گلیڈی ایٹرز ٹیموں کی نمائندگی کرنے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

یاد رہے کہ سلیکٹرز سے ناراض ایک اور نوجوان بلےباز رمیز راجہ جونیئر بھی ڈومیسٹک سیزن کھیلنے کے بجائے امریکا میں کلب کرکٹ کھیلنے کا فیصلہ کرچکے ہیں۔

قومی کرکٹ ٹیم کےسابق کپتان و کوچ جاوید میاںداد نے سماء سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بورڈ حکام کو نوجوان بلےبازوں کے بارے میں سوچنا چاہیے اور اسی طرح نوجوان کھلاڑیوں کو سمجھنے کی ضرورت ہے کہ ٹیم میں صرف 11کھلاڑیوں کو ہی شامل کیاجاسکتا ہے انہیں اپنی پرفارمنس مزید بہتر کرنی چاہیے تاکہ قومی ٹیم کے مستقل رکن بن سکیں۔

قومی کرکٹ ٹیم کا فیوچر قرار دیے جانے والے نواجون کرکٹرز کا ایک کے بعد ایک ملک چھوڑ جانے یا کلب کرکٹ کو چھوڑنے پر اسپورٹس رپورٹر شاہد ہاشمی نے سماء سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سمیع اسلم قائداعظم ٹرافی میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کررہے سیکنڈ ٹاپ اسکورر تھے لیکن بلوچستان کی ٹیم کے اہم اراکان نے بتایا کہ سمیع اسلم دل لگا کرنہیں کھیل رہے اگر کھیلیں تو تقینا ٹیم میں سلیکٹ ہوجائیں گے۔

شاہد ہاشمی نے مزید کہا کہ نوجوان کرکٹرز جذبات میں فیصلے کرلیتے ہیں تاہم انہیں سمجھانے کی ضرورت ہے لیکن محمد عرفان اور رمیز راجا جونئیرکے مقدر کا فیصلہ ان کے جانے پر منحصرہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube