Saturday, November 28, 2020  | 11 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > کھیل

پی ایس ایل1اور2 میں2ارب77کروڑروپےکی مالی بےضابطگیاں،آڈٹ رپورٹ

SAMAA | - Posted: Sep 30, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Sep 30, 2020 | Last Updated: 2 months ago

پاکستان سپرلیگ کی آڈٹ رپورٹ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں پیش کردی گئی ہے۔ رپورٹ میں پی ایس ایل 1 اور 2 میں 2 ارب 77 کروڑ روپےکی مالی بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے۔اسلام آباد یونائٹیڈ،پشاورزلمی اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی فرنچائز بھی کم قیمت پر نیلام کی گئیں۔

بدھ کو اسلام آباد میں قومی اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس ہوا۔رکنکمیٹی اقبال محمد نے پی ایس ایل 5 میں بڑے پیمانے پر گھپلوں کا انکشاف کیا۔فرنچائزکولائسنس جاری کرنے میں بے ضابطگیوں  جبکہ ڈی جی آڈٹ نے پی سی بی پر ریکارڈ فراہم نہ کرنے اور عدم تعاون کا الزام عائد کیا۔

چئیرمین پی سی بی احسان مانی کی جانب سےآڈٹ معاملات سےلاعلمی کے اظہارپرکمیٹٰی ارکان برہم ہوگئے اور کہا کہ اگر آپ کومعاملات کا علم نہیں تو کمیٹٰی میں کیوں آئے؟۔

پی ایس ایل 1 اور 2 کی خصوصی آڈٹ رپورٹس کمیٹی میں پیش کردی گئیں۔ادارے میں 2 ارب 77 کروڑ روپےکی مالی بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا۔پی ایس ایل میں 3 ٹیمیں،اسلام آباد یونائٹیڈ،پشاور زلمی اورکوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی فرنچائز کم قیمت پر نیلام کی گئی۔پی سی بی کو11 لاکھ ڈالر سالانہ نقصان ہوا۔چئیرمین پی سی بی نے اسے مشکل حالات کا تقاضا قراردیا۔

احسان مانی نے کہا کہ ٹیلی ویژن پر ہم ایک اپنا ڈیجٹل پلیٹ فارم لے کر آرہے ہیں اورپہلی دفعہ پاکستان کی تاریخ میں سارے میچز دکھائے جائیں گے۔

احسان مانی کا کہنا تھا کہ انہوں نے کسی غیرملکی کھلاڑی کو پیسے دے کر پاکستان نہیں بلایا،وزیراعظم سے کھلاڑیوں کی ملاقات کا معاملہ پی سی بی کی انضباطی کمیٹی دیکھ رہی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube