Friday, July 3, 2020  | 11 ZUL-QAADAH, 1441
ہوم   > کھیل

سينٹرل کنٹريکٹ نہ ملنےپر8 ویمن پاکستانی کرکٹرزکاکرکٹ چھوڑنےپرغور

SAMAA | - Posted: Jun 27, 2020 | Last Updated: 6 days ago
SAMAA |
Posted: Jun 27, 2020 | Last Updated: 6 days ago

تنخواہ بند ہوگئی ہے

قومی ويمن کرکٹرز شديد مشکلات کا شکار ہیں۔سينٹرل کنٹريکٹ نہ ملنے پر پاکستان کی 8 ويمن کرکٹرز نے کرکٹ چھوڑنے پر غور شروع کرديا ہے۔

آٹھ ويمن کرکٹرز نے سینٹرل کنٹریکٹ نہ ملنے پر دلبرداشتہ ہوکر کرکٹ چھوڑنے پرغور اور دوسری نوکری کی تلاش شروع کردی ہے۔ قومی کرکٹرز شديد مالی بحران کا شکار ہیں۔ ڈیپارٹمنٹل کرکٹ بند ہونے سے ماہانہ تنخواہ بند ہوگئی ہے اورگھر چلانے کيلئے قرض لینے پرمجبور ہيں۔

کرکٹ چھوڑنے پرغور کرنے والی کرکٹرز میں 2 آل راؤنڈرز، 4 بلےبازاور 2 بولرز شامل ہيں۔

کنٹريکٹ نہ ملنے والی تمام 8 کرکٹرز کئی برس سے قومی ٹيم رہی ہیں۔ پی سی بی نے نئے سيںٹرل کنٹريکٹ ميں 18 کرکٹرز کو 4 کيٹگريز ميں رکھا ہے۔

نوجوان کرکٹرز کی کارکردگی کو سراہنے کے لئے پہلی بار ايمرجنگ کيٹیگری کی فہرست تشکيل دی ہےجس ميں  9کرکٹرز شامل ہيں۔اے کيٹگری ميں 2، بی ميں 3 اور سی کيٹیگری ميں 4 کرکٹرز شامل ہيں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube