ہوم   > کھیل

قومی خواتین کرکڑز کیلئے ایبٹ آباد میں ہائی پرفارمنس کیمپ جاری

2 months ago

ایبٹ آباد میں قومی خواتین کرکڑز کیلئے ہائی پرفارمنس کیمپ جاری ہے جس میں 30 کھلاڑی شریک ہیں۔ کیمپ 30 اگست تک جاری رہے گا۔

بنگلہ دیش اور انگلینڈ کیخلاف سیریز اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ورلڈ کپ کی تیاری کیلئے ایبٹ آباد میں کیمپ لگایا گیا ہے۔ کیمپ میں سینیئر اور اے ویمن ٹیم پر مشتمل 30 کھلاڑی شرکت کر رہی ہیں۔

کیمپ کے دوران قومی خواتین کرکٹرز 28 اگست کو کاکول ملٹری اکیڈمی میں ٹریننگ کریں گی۔

قومی خواتین کرکٹ ٹیم کو آئندہ سال آسٹریلیا میں شیڈول آئی سی سی ویمن ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ورلڈکپ میں بھی شرکت کرنی ہے۔ اکتوبر میں قومی خواتین اے کرکٹ ٹیم کو سری لنکا کا دورہ کرنا ہے۔

بیٹنگ کوچ کا کہنا ہے کہ 30 کھلاڑیوں کو بلایا ہم سیکنڈ لاٹ کو بھی بہتر کرنا چاہتے ہے۔ ہم ان کی بیٹنگ، بالنگ اور فیلڈنگ پر کام کر رہے ہیں۔

ثناء میر کا کہنا ہے کہ ایبٹ آباد کا موسم ملک کے دیگر علاقوں سے بہتر ہے۔ میچ کے دوران بارش ہوتی ہے تو آؤٹ فیلڈ بھیگ جاتی ہے جو دیگر ممالک میں بھی ہوتی اور اس طرح ہمیں اس کی پریکٹس بھی ہوتی ہے۔

قومی کرکٹر نے کہا کہ یہاں ہمیں سینٹر وکٹ ملی ہوئی ہے جو دوسرے جگہوں پر نہیں ملتی۔ میچز کھیل رہے ہیں اس سے پریکٹس زیادہ ہوتی اور سیکھنے کا موقع ملتا ہے۔

کیمپ کیلئے کھلاڑیوں کا انتخاب قومی خواتین کرکٹ ٹیم کی سلیکشن کمیٹی نے کیا ہے۔ عروج ممتاز کی سربراہی میں کام کرنے والی 3 رکنی کمیٹی میں اسماویہ اقبال اور مرینہ اقبال شامل ہیں۔

کھلاڑیوں میں عالیہ ریاض، عروب شاہ، عائشہ ناز، عائشہ ظفر، بسمعہ معروف، ڈیانا بیگ، فاطمہ ثناء اور حرینہ سجاد شامل ہیں جبکہ ارم جاوید، جویریہ رؤف، جویریہ ودود، کائنات حفیظ، کائنات امتیاز، ماہم طارق، منیبہ علی، بی بی ناہیدہ اور نجیہہ علوی کو بھی کیمپ میں طلب کیا گیا ہے۔

اسکے علاوہ نشرہ سندھو، نتالیہ پرویز، نداراشد، رامین شمیم، صباء نذیر، سعدیہ اقبال، ثناء میر، سدرہ امین، سدرہ نواز، سوہا فاطمہ، طوبہٰ حسین، عمیمہ سہیل اور وحیدہ اختر بھی کھلاڑیوں میں شامل ہیں۔

عائشہ جلیل منیجر، ہیڈ کوچ مارک کولز، بیٹنگ کوچ اقبال امام، ٹرینر جمال حسین اور کوچ اے ٹیم شاہد انور بطور آفیشل کیمپ میں شرک ہیں۔

کیمپ میں سینیئر اور ایمرجنگ کھلاڑیوں کی تکنیک و مہارت کو بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ بیٹنگ، بالنگ اور فیلڈنگ میں نکھار پیدا کرنے کیلے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں