ورلڈکپ فائنل،نیوزی لینڈ کا ٹاس جیت کر انگلینڈ کے خلاف بیٹنگ کا فیصلہ

July 14, 2019

لارڈز میں نیوزی لینڈ نے انگلینڈ کے خلاف ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا ہے۔

فائنل میچ کے لیے دونوں ٹیموں نے اپنے ان ہی کھلاڑیوں کو برقرار رکھا ہے جنھوں نے سیمی فائنل میں شرکت کی تھی۔ ورلڈکپ کے پہلے سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ نے بھارت کو شکست دی تھی۔ دوسرے سیمی فائنل میں آسٹریلیا کی ٹیم میزبان انگلینڈ کے سامنے ڈھیر ہوئی تھی۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کی ٹیموں کو پاکستان نے راؤنڈ رابن مقابلوں میں شکست دی تھی تاہم پاکستان ٹیم نیوزی لینڈ کے برابر 11 پوائنٹس کے باوجود رن ریٹ کی بنیاد پر سیمی فائنل کے لیے کوالی فائی نہیں کرسکی تھی۔

کلائیو لائیڈ سے عمران خان تک اور رکی پونٹنگ سے ایم ایس دھونی تک عالمی کپ کے فاتح رہے۔

کبھی لارڈز تو کبھی میلبورن میں کرکٹ کے عالمی میلے کا فائنل کھیلا گیا۔ لاہور میں بھی میدان سجا اور ممبئی میں بھی فائنل ہوا لیکن انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کو ہر بار خالی ہاتھ لوٹنا پڑا۔

انگلینڈ کی جانب سے آئن بوتھم، گراہم  گوچ اور نیوزی لینڈ کی جانب سے رچرڈ ہیڈلی اور مارٹن کرو سب ناکام رہے لیکن اس بار نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن اور انگلینڈ کے کپتان آئن مورگن اپنی ٹیموں کی کامیابی کے لیے پُرعزم ہیں۔

انگلینڈ کے پاس ہوم گراونڈ کا ایڈوانٹج ہے تو بے خوف کیویز تاریخ رقم کرنا چاہتے ہیں۔انگلینڈ کی قوت بیٹنگ لائن ہے تو نیوزی لینڈ کی طاقت خطرناک بالرز ہیں۔

لارڈز میں چاروں میچز پہلے بیٹنگ کرنے والی ٹیم نے جیتے ہیں۔ ورلڈکپ جیتنے والی ٹیم کو 40 لاکھ ڈالرز جب کہ رنرز اپ  کے حصے میں 20 لاکھ ڈالرز آئیں گے۔