تیسرے ون ڈے میں بھی پاکستان کو انگلینڈ کے ہاتھوں شکست

May 15, 2019

تیسرے ون ڈے میں بھی پاکستان پہاڑ جیسا ہدف دے کر بھی میچ جیت نہ سکا۔ ناقص باؤلنگ اور فیلڈنگ قومی ٹیم کی جیت کی راہ میں آڑے آگئی۔ انگلینڈ ایک بار پھر قومی ٹیم کو تیسرے ون ڈے میں چھ وکٹوں سے شکست دے کر 2-0 کی برتری حاصل کرلی۔

قومی ٹیم کی جانب سے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 359 رنزکا ہدف انگلینڈ کو دیا گیا، جو میزبان ٹیم نے 45 ویں اوورز میں حاصل کرلیا۔ ناقص فیلڈنگ اور بالنگ کے باعث پاکستان ہدف کا دفاع نہ کرسکا۔

میچ کی نمایاں بات انعام الحق کی عمدہ بیٹنگ رہی۔ جہاں برسٹل میں رنز کا طوفان آگیا اور انعام الحق کا بلا رنز اگلتے ہوئے اسکور ایک سو اکاون تک لے گیا۔ پاکستان کی جانب سے رنز کی بہتی گنگا میں آصف علی اور حسن علی نے بھی خوب ہاتھ صاف کیے، جس کے بعد 359 کا پہاڑ جیسا ٹارگٹ انگلش ٹیم کو دیا گیا، مگر پاکستان کی بولنگ فیل ہوگئی۔

انگلش اوپنرز کے لاٹھی چارج نے بولرز کو دن میں تارے دکھا دئیے۔ بیئراسٹو نے ایک سو اٹھائیس رنز کی شاندار اننگ کھیلی۔ جیسن رائے چہتر رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ دونوں بلے بازوں نے کسی پاکستانی بولر کو نہ بخشا۔ معین علی نے ٹوٹل میں چھیالیس رنز جوڑے اور ٹیم کی فتح میں کردار ادا کیا۔ وننگ شاٹ انگلش کپتان مورگن کے حصے میں آیا۔

تیسرے ون ڈے میں پاکستانی ٹیم کی ناقص کارکردگی دیکھنے میں آئی، جہاں شاہینوں نے چار اہم کیچ ڈراپ کیے۔ شاہین آفریدی نے اکیس رنز پر جیسن رائے کا آسان کیچ گرایا، جس کے بعد انہیں نصف سنچری بنانے کا موقع مل گیا۔

فہیم اشرف نے بھی کیچ ڈراپ کرکے بیئراسٹو کی بیٹنگ لائن کو نئی زندگی دی تو انہوں نے سنچری بنا دی۔ معین علی کو دو بار عماد وسیم اور بابراعظم نے نئی لائف دی۔