پی ایس ایل کے دوران نسل پرستی اور دیگر سرگرمیوں کے لیے کوڈ متعارف

February 10, 2019

پی سی بی نے کرکٹ کے کھیل میں نسل پرستی سے متعلق سرگرمیاں روکنے کےلیے کوڈ متعارف کرادیا ۔ اطلاق پی ایس ایل کے چوتھے سیزن سے شروع ہوگا۔ کوڈ میں سخت سزائیں تجویز کی گئی ہیں ۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کےمطابق تمام کھلاڑی ، منیجمنٹ اورایمپائرزقانون پر عمل کے پابند ہوں گے۔اس میں مصالحت کی آپشن رکھی گئی ہے۔

پہلے مرحلے پر فریقین کی باہمی اور پھر پی سی بی کی مصالحت کو کوڈ کا حصہ بنایا گیا ہے۔ پہلی بار خلاف ورزی  پر کھلاڑی یا منیجمنٹ اسٹاف کو 4 سے 8 میچز کی پابندی کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

پی سی بی نے نسلی تعصب کے خاتمے کا قانون منظور کرلیا، پی ایس ایل سے لاگو ہوگا

دوسری بار نسل پرستانہ سرگرمی پر 8 میچوں سے لے کر تاحیات پابندی کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے ۔جرم کا ارتکاب کرنے والے ہر فرد کو انسداد نسل پرستی پر تعلیمی پروگرام میں بیٹھنا بھی لازمی ہوگا۔