یاسر شاہ 4 سال میں دنیا کے عظیم بالرز میں شامل ہوگئے

December 6, 2018

کرکٹ کی تاریخ میں بڑے بالرزگزرے ہیں۔ کوئی سوئنگ کا کنگ تو کوئی اسپیڈ کا بادشاہ رہا، گگلی اور دوسرا کرانے والے جادوئی اسپنرز اپنے گیندوں سے سب کو چکرادیتے تھے۔ عظیم ترین کرکٹرز پر مشتمل آئی سی سی ہال فیم پر نظر ڈالیں تو آسٹریلیا کے ڈینس للی اور وقار یونس نے دو سو وکٹوں کا سنگ میل 38 میچوں میں عبور کیا تھا۔

 ٹیسٹ کرکٹ میں مرلی دھرن 800 وکٹوں کے ساتھ سرفہرست ہیں۔ پاکستان کے وقار یونس نے 200 وکٹوں کا کارنامہ صرف 38 میچز میں انجام دیا تھا۔ خوبصورت رن اپ کے ساتھ گیند کراتے اسپیڈ کنگ میلکم مارشل نے کرئیر کے 42ویں ٹیسٹ میں یہ کارنامہ انجام دیا۔

لیگ اسپن کے آرٹ کو نئی بلندیوں پر لے جانے والے شین وارن کو بھی 200 وکٹوں کے لیے 42 میچز کا انتظار کرنا پڑا۔ کرکٹ کی تاریخ میں سب سے زیادہ 800 وکٹیں لینے والے مرلی دھرن نے بھی 42 ٹیسٹ میچز200 وکٹیں مکمل کیں۔

یاسر شاہ کا ریکارڈ کسی چیلنج سے کم نہیں

آسٹریلیا کے گلین مک گرا نے 45 اور ویسٹ انڈیز کے مائیکل ہولڈنگ نے 47 میچوں میں یہ کارنامہ انجام دیا۔سوئنگ کے سلطان وسیم اکرم نے 51 ٹیسٹ میچز میں کیرئیر کی 200 ویں وکٹ اپنے نام کی۔ 36میچوں میں تیزترین 200 وکٹوں کا اعزاز آسٹریلیا کے کیلیری گریمٹ کے نام تھا مگر یاسر شاہ نے یہ ریکارڈ توڑ ڈالا۔

یاسرشاہ نے ٹیسٹ کرکٹ میں 200 وکٹوں کا 82 سال پراناریکارڈ توڑدیا

یاسر شاہ نے کرکٹ کی تاریخ کے بڑے بالرز کو پیچھے چھوڑتے ہوئے صرف 33میچز میں 200 وکٹیں مکمل کیں۔