یاسر شاہ کا ریکارڈ کسی چیلنج سے کم نہیں

December 6, 2018

ڈینس للی سے بوریوالہ ایکسپریس تک  مشرق کے جادوگر عبدالقادر سے شین وارن تک ، بڑے ناموں نے بے شمار ریکارڈز بنائے مگر تیز ترین 200 وکٹوں کا ریکارڈ قائم رہا ۔ 82 سال پرانا ریکارڈ  یاسر شاہ نے توڑا۔

کرکٹ کے بڑے نام تیز ترین 200 وکٹوں کا ریکارڈ نہ توڑ سکے۔ڈینس للی، وقار یونس، عبدالقادر سب نے بیشمار ریکارڈزبنائے۔شین وارن، مرلی دھرن اور انیل کمبلے نے ریکارڈزکے انبار لگائے۔یاسر کی لیگ بریک، گگلی، ٹاپ اسپن نے سب کے چھکے چھڑادئیے،یاسر شاہ وکٹیں گراتا، میچ جتواتا عالمی ریکارڈ تک پہنچ گیا۔کرکٹ کی تاریخ میں 200 تیز ترین وکٹوں کا ریکارڈ یاسر کے نام رہا۔

یہ چند عشروں پہلے کا ذکر ہے جب کرکٹ کے میدانوں پر آسٹریلیا کے ڈینس للی اور جیف تھامسن کا راج تھا ۔رفتار ایسی کے پلک جھپکی نہیں وکٹ گری نہیں۔

پھر نیا دور شروع ہوا اوربیٹسمین نئی مشکل میں گرفتار ہوگئے۔ وکٹ بچائیں یا سر؟ ایل بی ڈبلیو نہ ہوئے تو ان فٹ ہوجائیں؟میلکم مارشل ،مائیکل ہولڈنگ ، جوئیل گارنر اور اینڈی رابرٹس دہشت کی علامت بن گئے۔

نوے کی دہائی میں پاکستانی ٹو ڈبلیوز ریورس سوئنگ اورٹوکرشنگ یارکرزسے لمحوں میں کھیل کا پانسہ پلٹ دیتے اور منٹوں میں بیٹنگ لائن چٹ کرجاتے۔

اسی عرصے میں اسپن کا فن نئی بلندیوں کو چھونے لگا۔ شین وارن، مرلی دھرن اور انیل کمبلے نے اپنی جادوگری سے ریکارڈز کے انبار لگادیے۔

مگرجو کوئی نہ کرسکا تھا وہ اسپن کے بادشاہ یاسر شاہ نے کر دکھایا ۔ انھوں نے ایسا ریکارڈ قائم کیا جو آئندہ آنے والے سالوں میں بالرز کے لیے کسی چیلنج سے کم نہیں ہوگا۔