دہشت کی علامت انڈر ٹیکر کو کس کی نظر لگ گئی؟

November 6, 2018

اٹھائیس سالوں سے ڈبلیو ڈبلیو ای میں دہشت کی علامت بنے انڈر ٹیکر کو شایدکسی کی نظر لگ گئی ہے،ایک ایسا وقت تھا کہ جب’’ ڈیڈ مین ‘‘کہلائے جانے والے دی انڈر ٹیکر کی انٹری سے ہی اچھے اچھے ریسلرز کی گھگی بند جاتی تھی،مگر اب گزشتہ پانچ سالوں سے اپنے حریفوں کے لیے خوف کی علامت بنے انڈر ٹیکر کے عروج کے سورج کو مسلسل زوال کا گرہن لگا ہوا ہے۔

ریسلمنیا 30میں براک لیسنر سے ہارنے کے بعد انڈر ٹیکر اب ڈبلیو ڈبلیو ای میں خال خال ہی نظر آتے ہیں ،اور ایسا سال میں ایک بار ڈبلیو ڈبلیو ای کے میگا ایونٹ ریسلمنیا میں ہی ممکن ہو پاتا ہے ،ریسلمنیا 30 میں مسلسل 21 میچز جیتنے کے بعد جب وہ پہلی بار ہارے تو دیکھنے والوں کو اپنی آنکھوں پر یقین تک نہیں آیا،یہ وہ پہلا موقعہ تھا جب انڈر ٹیکر کی شہرت  کے ساتھ ان کے مداحواں کو دھچکہ لگا۔

یہ ہار شاید ان سے برداشت نہیں ہوئی تبھی وہ اگلے تین سال میں محض 3 بار ہی ایکشن میں دکھائی دیئے اور اس میں بھی دیکھنے والوں نے صاف دیکھا کہ ان کا جسم اب ان کا ساتھ نہیں دے رہا،ریسلمنیا 33 میں محض تین سال بعد ایک بار پھر اندر ٹیکر کی صلاحیتوں پر سوال اٹھنے لگے جب وہ  رومنز رینس جیسے نووارد سے ہار گئے ،اس میچ کے بعد انڈر ٹیکر کے مداحوں کی آنکھوں میں مایوسی دیکھ کر ہی شاید انھوں نے پہلی بار ڈبلیو ڈبلیو ای سے اپنی ریٹائرڈمنٹ کا عندیہ دیا۔

گو کہ انڈر ٹیکر اس کے بعد بھی ڈبلیو ڈبلیو ای کے رنگ میں نظر آتے ہیں مگر اب ان کے حریفوں کی آنکھوں میں ان کے لیے خوف نہیں دکھتا،اور نہ ہی انڈر ٹیکر کے مداحوں کو اب ان کے ہارنے سے حیرت ہوتی ہے۔

اس کا واضع ثبوت اس بارڈبلیو ڈبلیو ای کے میگا ایونٹ سپر شو ڈاؤن میں وہ ٹرپل ایچ سے ہارے جب کہ اس کے محض 25 دن بعد ایک بارپھر ٹرپل ایچ اور شان مائیکلز کی جوڑی کے سامنے انڈر ٹیکر اورکین کی جوڑی بے بس نظر آئی، انڈر ٹیکر اس بار بھی رنگ میں اترے مگر ان کے جسم میں وہ پہلی سی پھرتی کہیں بھی نظر نہ آئی،اورشاید ہارنے کے بعد  یہی دیکھتے ہوئے انھوں نے ایک بار پھر اپنی ریٹائرڈمنٹ کا اشارہ دے دیا ہے، اور ڈبلیو ڈبلیو ای انتظامیہ سے اپنے کیرئیر کے آخری میچ کی درخواست بھی کر دی ہے،ممکن ہے کہ 28 سالوں سے اپنے خطرناک مووز کے زریعے ہمیں ورطہ حیرت میں ڈالنے والے اندر ٹیکر کو اس بار ریسلمنیا 35 میں ہم آخری بار ڈبلیو ڈبلیو ای کے رنگ میں لڑتا  دیکھ پائیں ۔