سوشل میڈیا پول زندگی یا موت؟، لڑکی نے لوگوں کی رائے پر خودکشی کرلی

May 15, 2019

سیلفی کے شوق میں حادثات کا شکار ہوکر کئی قیمتی جانیں جاچکی ہیں تاہم سوشل میڈیا نے بھی ایک لڑکی کی جان لے لی، اس نے ایک پول میں لوگوں سے پوچھا کہ اسے زندہ رہنا چاہئے یا مرجان چاہئے؟، اس نے ڈی (یعنی ڈیتھ) اور ایل (یعنی لائف) پر ووٹ کا آپشن دیا، جس پر زیادہ تر لوگوں نے ڈی پر ووٹ کیا، جس کے بعد لڑکی نے خود کشی کرلی۔

ملائیشیا میں 16 سالہ لڑکی نے سوشل میڈیا (انسٹاگرام) پر ایک پول پوسٹ کیا جس میں اس نے لوگوں سے رائے مانگی کہ اسے زندہ رہنا چاہئے یا مرجانا چاہئے؟، لوگوں کی اکثریت نے جب اسے مرنے کی صلاح دی تو اس نے خودکشی کرلی، لڑکی کا تعلق ملائیشیا کی ریاست ساراوک سے تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق مقامی پولیس نے لڑکی کی موت کی تحقیقات کے بعد اسے ’’اچانک موت‘‘ قرار دیا ہے، اس پول میں 69 فیصد افراد نے لڑکی کو زندگی کا خاتمہ کرنے کا مشورہ دیا جبکہ 31 فیصد نے اسے زندگی کا انتخاب کرنے کو کہا۔

ملائیشین رکن پارلیمنٹ رام پال سنگھ نے لڑکی کی اس طرح موت کا سبب بننے والے حالات و واقعات کی تحقیقات کا مطالبہ کردیا۔ کہتے ہیں کہ حکام سوشل میڈیا اکاؤنٹس کی جانچ پڑتال کریں تاکہ سوشل میڈیا کے غلط استعمال اور اس طرح کے واقعات کو روکا جاسکے۔