ہوم   > سوشل میڈیا میں

گورنرسندھ کو صدر کے ساتھ بیٹھ کرسادگی کا پرچار مہنگا پڑا

11 months ago

گورنرسندھ عمران اسماعیل فرائض منصبی بھلے سے کیسے ہی نبھائیں لیکن پل پل کی رپورٹ پیش کرنے کیلئے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹرپر خاصے سرگرم رہتے ہیں۔ دوروزقبل انہوں نے صدرعارف علوی کے ساتھ گورنر ہاؤس کراچی کی سیڑھیوں پر بیٹھے ہوئے کھینچی گئی سادگی سے بھرپورایک تصویر شیئرکی لیکن اس تصویر میں ’’سادگی ‘‘ کے علاوہ بھی کچھ ایسا تھا کہ صارفین کو مریم نوازکی یاد آگئی اورگورنر صاحب کو لینے کے دینے پڑگئے۔

ٹوئٹر پر شیئرکی جانے والی تصویر میں عمران اسماعیل نے لکھا کہ ’’ صدر پاکستان ایک سادہ آدمی، گورنرہاؤس میں میرے ساتھ غیر رسمی گفتگو کے دوران سیڑھیوں پر بیٹھے ہیں ‘‘۔

بظاہرتو تصویرمیں ایسا کچھ نہیں لیکن دیکھنے والے بھی قیامت کی نظررکھتے ہیں۔ فورا سے گورنرسندھ کے جوتے کو نوٹس کیا اور تبصروں میں تنقید کے نشتربرساتے ہوئے جوتے کی قیمت تک بتادی۔

مختلف ٹویٹس میں کسی نے جوتے کی برانڈ بتاتے ہوئے پاکستانی روپوں میں 97 ہزار 995 روپے قیمت بتائی تو کسی نے ایک لاکھ 8 ہزار ۔۔ ایک صاحب کے مطابق جوتوں کی قیمت 2 لاکھ روپے ہے۔

اس کے علاوہ صارفین نے گورنرکو فوٹوشوٹ کے بجائے کام کرنے کی بھی خوب تلقین کی۔

اس سے قبل مریم نواز کے مہنگے جوتوں کا بھی خوب چرچاہواتھا۔تیرہ جولائی 2018 کی شام سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز براستہ ابوظہبی لندن سے پاکستان پہنچے تو ابوظہبی ائرپورٹ پرکھینچی جانے والی مریم کی تصویر کو بےتحاشا تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

وجہ تھی ان کا مہنگی ترین غیرملکی برانڈ ’’گوچی ‘‘کا جوتا۔450 پونڈ (تقریبا 71 ہزار 929 پاکستانی روپے ) کا یہ جوتا مخالفین نے خوب اچھالا جن میں پی ٹی آئی والے پیش پیش تھے۔

یہی نہیں اس وقت کےپی ٹی آئی رہنما اور موجودہ وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے جنوری 2018 میں مریم نواز کے جوتوں کےحوالے سے ٹویٹ میں خوب تنقید کی تھی۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں