Wednesday, January 19, 2022  | 15 Jamadilakhir, 1443

غیرقانونی بھرتیوں کاکیس،قائم علی شاہ کی عبوری ضمانت خارج

SAMAA | - Posted: Dec 8, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Dec 8, 2021 | Last Updated: 1 month ago

محکمہ اطلاعات سندھ  میں غیرقانونی بھرتیوں سےمتعلق کیس میں سندھ ہائی کورٹ نے سابق وزیراعلی قائم علی شاہ کی عبوری ضمانت خارج کردی ہے۔

بدھ کو غیرقانونی بھرتیوں سےمتعلق کیس میں عدالت نے ریمارکس دیئے کہ نیب آرڈیننس کے تناظرمیں اس درخواست کومزید نہیں سن سکتے۔عدالت نے قائم علی شاہ کی عبوری ضمانت خارج کردی تاہم نیب کورٹ میں پیش ہونے کیلئےقائم علی شاہ کی 10 روزکیلئے حفاظتی ضمانت منظورکرلی۔

اس کیس میں پیپلزپارٹی رہنما شرجیل میمن کے وکیل نے بتایا کہ شرجیل میمن ملک سے باہر ہیں اور10 روز میں پیش نہیں ہوسکتے۔وکیل کا کہنا تھاکہ شرجیل میمن کی گرفتاری کا خدشہ ہےاس لئےنیب کورٹ میں پیش ہونے کے لئے مہلت دی جائے۔عدالت نے ریمارکس دئیے کہ آپ چاہیں تو درخواست ضمانت واپس لےلیں تاہم مزید مہلت نہیں دے سکتے اورشرجیل میمن کو واپسی پر نئی ضمانت حاصل کرنا ہوگی۔عدالت نے شرجیل میمن کے وکیل کی استدعا مسترد کردی اور وکیل نے درخواست ضمانت واپس لے لی۔

گذشتہ سماعت پر پراسیکیوٹر نیب نےعدالت کو بتایا تھا کہ ملزمان کے خلاف انکوائری مکمل کرکے اسلام آباد بھیج دی ہے اور توقع ہے کہ جلد ہی اس انکوائری کو ریفرنس میں تبدیل کرنے کا فیصلہ ہوجائے گا۔

واضح رہے کہ نیب کے مطابق ملزمان پر گریڈ 17 کے 45  سے زائد افسران کی غیرقانونی بھرتی کا الزام ہے۔ قائم علی شاہ نے بطور وزیراعلی 2012 میں بھرتی کی منظوری دی تھی۔ افسران کو قانونی تقاضے پورے کیے بغیر کنٹریکٹ پررکھا گیا اور پھر توسیع دی گئی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube