Friday, January 21, 2022  | 17 Jamadilakhir, 1443

پی ڈی ایم میں لڑائی: مولانا جارہے ہیں؟

SAMAA | - Posted: Dec 6, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Dec 6, 2021 | Last Updated: 2 months ago

مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے سربراہی اجلاس میں صدر پی ڈی ایم کا کہنا تھا کہ استعفے نہیں دینے تو میری سربراہی کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ایسے ہی چلنا ہے تو کسی اور کو سربراہ بنا دیں اگر اتحاد حکومت کو گھر بھیجنے میں سنجیدہ نہیں توگپ شپ کافائدہ نہیں ہے۔

صدر پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان نے صدارت چھوڑنے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ اگر استعفوں پراتفاق ہے تو مستعفی ہونے میں تاخیر کیوں کی جارہی ہے۔

ذرائع کے مطابق مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہمارا تو روز اول سے یہی موقف رہا ہے کہ اسمبلیوں سے استعفیٰ دیا جائے جس پر تمام جماعتوں نے اصولی اتفاق بھی کیا تھا مگر اس میں غیرضروری تاخیر کی جارہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کو بار بار وقت دینے سے یہ تاثر مل رہا ہے کہ جیسے ہم حکومت کے سہولت کار ہیں تاہم اب اس تاثر کو ختم کرنے کا وقت آگیا ہے۔

ذرائع کے مطابق قائد ن لیگ نوازشریف نے بھی مولانا فضل الرحمان کے موقف سے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں سنجیدگی سے حکومت کو گھر بھیجنے کےلیے کام کرنا چاہئے تاہم دیگر جماعتوں کی طرف سے تاحال کوئی ردعمل نہیں آیا۔

ذرائع کے مطابق مولانا فضل الرحمان نے پی ڈی ایم کی سربراہی چھوڑنے کی دھمکی اس وقت دی جب صدر ن لیگ شہبازشریف کی جانب سے اتفاق رائے سے فیصلہ کرنے کا مشورہ دیا گیا۔

دوسری جانب اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم نے 23مارچ کو مہنگائی مارچ کا فیصلہ کیا ہے جس میں شرکت کےلئے ملک بھر سے عوام اسلام آباد کی طرف آئے گی۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ مارچ سے قبل کارکنوں کو متحرک کرنے کےلیے صوبوں کی سطح پرپی ڈی ایم کے اجلاس منعقدہوں گے۔

اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ پنجاب میں ڈی ایم کا اجلاس شہبازشریف خیبرپختونخوا میں مولانا فضل الرحمان، بلوچستان میں محمود خان اچکزئی اور سندھ کی سطح پر اویس نورانی پی ڈی ایم کا اجلاس بلائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اجلاس میں استعفوں کا معاملہ بھی زیرغور آیا تاہم استعفوں کا کیسے استعمال کرنا ہے یہ فیصلہ اپنی مرضی سے کریں گے۔

صدر پی ڈی ایم کا کہنا تھا کہ کل اتحاد کے اسٹیئرنگ کمیٹی کا اجلاس ہوگا جو آج کے اجلاس میں ہونے والے  فیصلے پرعملد رآمد کا جائزہ لے گا۔

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ فضل الرحمان کے سخت موقف کے باعث پی ڈی ایم مہنگائی مارچ پر متفق ہوگئی جبکہ مولانا فضل الرحمان نے پی ڈی ایم کو2روزہ دھرنے پر بھی قائل کر لیا ہے۔

پی ڈی ایم کا مہنگائی مارچ 23 مارچ کو اسلام آباد پہنچے گا اور مارچ کے شرکاء  25تاریخ تک اسلام آباد میں ہی قیام کریں گے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube