Monday, January 17, 2022  | 13 Jamadilakhir, 1443

خیبرپختونخوا: غیرقانونی تعمیرات پر اب بلڈرجیل جائےگا

SAMAA | - Posted: Dec 3, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Dec 3, 2021 | Last Updated: 1 month ago

خیبرپختونخوامیں غیر قانونی تعمیرات کے خلاف قانون کا قانون منظور ہوگیا جس کی خلاف ورزی پر بلڈر کو جیل کی ہوا کھانی پڑے گی اور جرمانہ جدا ہوگا۔

خیبرپختونخوا میں اب غیر قانونی عمارتوں کی تعمیرات اب قابل تعزیر جرم تصور ہوں گی۔ صوبے میں پہلی بار لینڈ یوزاینڈ بلڈنگ کنٹرول کونسل کے قیام کا فیصلہ کیا گیا جس کی سربراہی وزیراعلیٰ محمود خان کریں گے۔

صوبے کے تمام شہروں کےلئے ماسٹر پلان بنے گا جس میں زمین کو مختلف درجہ بندیوں میں تقسیم کیا جائے گا۔

صوبائی وزیر کامران بنگش کا کہنا ہے کہ لینڈ یوزاینڈ بلڈنگ کنٹرول کونسل کا قیام پاکستان میں پہلی دفعہ ہورہا ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پوری دنیا میں اربنائزیشن اور کمرشلائزیشن ایک قانون کے تحت کی جاتی ہے۔

کامران بنگش کا کہنا تھا کہ 6 اضلاع میں لینڈ یوز پلان ہے جس میں پشاور بھی شامل ہے جبکہ اس کے علاوہ 22 اضلاع کے ماسٹر پلان بہت جلد لینڈ یوزاینڈ بلڈنگ کنٹرول کونسل سے منظور کرالیں گے۔

خیبرپختونخوا بلڈنگ کنٹرول ایکٹ کی خلاف ورزی پر 3 سال کی قید اور 10 لاکھ روپے جرمانہ کی سزا مقرر کی گئی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube