Sunday, January 16, 2022  | 12 Jamadilakhir, 1443

بھارتی لڑکی،پاکستانی لڑکےکو سرحدیں نہ روک سکیں

SAMAA | - Posted: Nov 30, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 30, 2021 | Last Updated: 2 months ago

بابا گرو نانک کے جنم دن پر پاکستان آئی بھارتی لڑکی نے اپنے سوشل ميڈيا پاکستانی دوست محمد عمران سے شادی کر لی۔

دونوں تین سال سے سوشل میڈیا پر ایک دوسرے کے دوست تھے۔ ان کی دوستی محبت میں تبدیل ہوئی جس کے بعد بھارت اور پاکستان کے اس لڑکی اور لڑکے نے اپنے ازادوجی سفر کا آغاز کردیا۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ اس جوڑے کی محبت کے بیچ سرحدیں تو کوئی دیوار کھڑی نہیں کر سکیں لیکن ایک اور مجبوری بھی ان کے عزم کے راستے میں رکاوٹ نہیں بنی جو ان دونوں کی قوت گویائی سے محرومی ہے۔

دونوں بول نہیں سکتے تاہم نکاح کی تقریب میں دونوں نے اشاروں سے ایک دوسرے کو قبول کیا۔ بھارتی لڑکی نے راجن پور کے رہائشی عمران سے لاہور پہنچ کر شادی کی اور نکاح کے دوران لڑکی کا حق مہر 5 لاکھ روپے مقرر کیا گیا۔

دلہن نے اشاروں سے واضح کیا کہ وہ عمران سے اپنی مرضی سےشادی کر رہی ہیں۔ البتہ لڑکے والوں کو یہ خوف تھا کہ کہیں کوئی انہیں ہراساں نہ کرے۔ اس خدشے کے پیش نظر رشتے داروں نے عدالت میں درخواست دائر کی جس پر عدالت نے گرین ٹاؤن پولیس کو حکم دیا کہ وہ درخواست گزاروں کو تحفظ فراہم کرے۔

خاتون چوں کہ بابا گرو نانک کی تقریبات میں شرکت کے لیے آئی تھیں اور ان کا ویزہ محدود تھا اس لیے وہ فی الحال وہ نکاح کرنے اور عدالت میں بیان دینے کے بعد واہگہ بارڈر کے ذریعے وطن واپس روانہ ہوگئیں۔ خاتون کا نام پرمجییت کور سے تبدیل کرکے اب پروین سلطانہ رکھ دیا گیا ہے۔

ارشد علی

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube