Saturday, January 29, 2022  | 25 Jamadilakhir, 1443

سپریم کورٹ نےرکن قومی اسمبلی علی وزیر کی ضمانت منظورکرلی

SAMAA | - Posted: Nov 30, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Nov 30, 2021 | Last Updated: 2 months ago

سپریم کورٹ نے رکن قومی اسمبلی علی وزیر کی ضمانت منظور کرتے ہوئے4 لاکھ روپے کے مچلکےٹرائل کورٹ میں جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

منگل کو سپریم کورٹ میں علی وزیر کی درخواست ضمانت سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ دوران سماعت عدالت میں کالعدم ٹی ٹی پی سےمذاکرات کا نام لیےبغیرتذکرہ بھی ہوا۔ جسٹس سردار طارق نے کہا کہ ریاست مذاکرات کرکےلوگوں کو چھوڑ رہی ہے،ہوسکتا ہے کہ کل علی وزیرکے ساتھ بھی معاملہ طےہوجائے۔ جسٹس سردارطارق نے ریمارکس دئیے کہ لوگ شہید ہورہےہیں،کیا وہاں قانون کی کوئی دفعہ نہیں لگتی؟کیا عدالت صرف ضمانتیں خارج کرنےکیلئےبیٹھی ہوئی ہے؟۔

جسٹس جمال مندوخیل نے استفسار کیا کہ کیا علی وزیر کے الزامات پر پارلیمان میں بحث نہیں ہونی چاہیے؟۔علی وزیرنےشکایت کی تھی اور اس کا گلہ دورکرنا چاہیے تھا۔ اپنوں کوسینےسےلگانےکےبجائے پرایا کیوں بنایا جا رہا ہے؟۔جسٹس جمال مندوخیل نے سوال اٹھایا کہ اگر علی وزیر کا ایک بھی الزام درست نکلا تو کیا ہوگا؟۔شریک ملزمان سےرویہ دیکھ کرگڈ طالبان بیڈ طالبان والا کیس لگتا ہے۔

علی وزیر کی رہائی:سندھ حکومت کی التوا کی استدعا منظور

سپریم کورٹ نے ریمارکس دئیے کہ شریک ملزمان کی ضمانت ہوچکی ہے جس کوچیلنج نہیں کیا گیا اور کیوں کہ شریک ملزمان کی ضمانت ہوگئی ہے تو علی وزیرکوبھی جیل میں نہیں رکھاجاسکتا ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سندھ ہائیکورٹ نے علی وزیر کی درخواست ضمانت مسترد کر دی تھی۔ یاد رہے کہ خیبرپختونخوا پولیس نے علی وزیر سمیت پشتون تحفظ موومنٹ کے متعدد رہنماؤں کو سال 2020 ستمبر میں کراچی میں جلسے کے بعد درج ہونے والے کیس کے سلسلے میں پشاور آرکائیوز ہال سے نکلتے وقت گرفتار کیا تھا۔

مارچ 2020 میں پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی علی وزیر کی نااہلی کے لیے اسلام آباد ہائیکورٹ میں بھی درخواست جمع کرائی گئی تھی۔

درخواست گزار نے پٹیشن میں الزام لگایا تھا کہ پی ٹی ایم ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث ہے اس لیے اس کے خلاف ڈکلئیریشن جاری کی جائے۔ مذکورہ درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی تھی کہ وہ وفاقی حکومت کو پی ٹی ایم کی حیثیت کا تعین کرنے اور ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث تنظیم قرار دینے کا حکم دیا جائے۔

درخواست میں کہا گیا تھا کہ عدالت حکومت کو ہدایت کرے کہ وہ پی ٹی ایم کے مبینہ غیر قانونی آپریشنز اور سرگرمیوں کو اس کی ممبرشپ، فنڈز اور روابط کو بے نقاب کرنے کے لیے تحقیق کرے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube