Wednesday, January 19, 2022  | 15 Jamadilakhir, 1443

سندھ حکومت کا غیرقانونی عمارتوں کو بچانے کا فیصلہ

SAMAA | - Posted: Nov 29, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 29, 2021 | Last Updated: 2 months ago

سندھ حکومت نے خلاف ضابطہ رہائشی تعمیرات کو قانونی تحفظ دینے کا فیصلہ کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ آرڈیننس کے ذریعے غیر قانونی عمارت اور رہائشی منصوبوں کو ریگولائز کیا جائے گا تاہم اس میں ملوث بلڈرز پر جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ صوبائی کابینہ کی منظوری کے بعد آرڈیننس گورنر کو بھیجا جائے گا جبکہ ريٹائرڈ جج کي سربراہی ميں ايک کميشن تشکيل ديا جائے گا جو غیر قانونی رہائشی منصوبوں کو ریگولائز کرنے کا فیصلہ کرے گا۔

دریں اثناء صوبائی وزير سعيد غنی کا کہنا ہے کہ پنجاب ميں ايسا آرڈيننس لايا جاسکتا ہے تو باقی صوبوں ميں کيوں نہيں لایا جاسکتا۔

سعید غنی نے کہا کہ پنجاب حکومت نے 6 ہزار سوسائٹيوں کوريگولرائزڈ کرنے کے لیے آرڈيننس جاری کیا تو پھر یہی پيمانہ ديگرصوبوں کے لیے کيوں نہيں ہے ہوسکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ سرکاری زمين پربسنے والی پرانی آبادی کوريگولرکرنے کی اجازت ہونی چاہيے۔ ان کامزید کہنا تھا کہ متاثرين کي تعداد لاکھوں ميں ہو تو انہیں بے گھر ہونے سے بچانا حکومت کی ذمہ داری ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube