Friday, January 28, 2022  | 24 Jamadilakhir, 1443

فرنس آئل کی درآمد میں کمی سےریلوےکو سالانہ5ارب روپے کاخسارہ

SAMAA | - Posted: Nov 29, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 29, 2021 | Last Updated: 2 months ago

سابقہ دور حکومت میں مہنگے فرنس آئل کی درآمد میں کمی کے فیصلے نے پاکستان ریلویز کو بڑے معاوضے سے محروم کردیا۔

مہنگا فرنس آئل معیشت پر بوجھ بننے لگا تو سن 2017 میں ن لیگی حکومت نے اس کی درآمد میں کمی کا فیصلہ کیا تاہم اس کی ترسیل سے اربوں روپے کمانے والے پاکستان ریلویز کی آمدن میں بڑی تخفیف ہوئی۔

پٹرولیم ڈویژن کی دستاویزات کے مطابق پاکستان ریلوے کو فرنس آئل کی درآمد میں کمی کے فیصلہ سے سالانہ 5 ارب روپے کا نقصان ہورہا ہے۔

دستاویزات میں بتایا گیا ہے کہ اس پالیسی سے ریلوے کے پاکستان اسٹیٹ آئل کے ساتھ ٹرانسپورٹیشن بزنس پر منفی اثرات پڑے کیوں کہ ریلوے ٹرانسپورٹ سسٹم کو فرنس آئل کی ترسیل کے لیے ہی بنایا گیا تھا۔

رپورٹ کے مطابق مالی سال 17-2016 میں مجموعی طور پر 11 لاکھ میٹرک ٹن فرنس آئل کی ترسیل ہوئی۔ سن 2017  کے بعد فرنس آئل کی درآمد بتدریج کم ہوتی گئی۔ سال 18-2017 میں ریلوے نے 6 لاکھ، 19-2018- میں 74 ہزار اور20-2019میں صرف 249 میٹرک ٹن فرنس آئل کی ترسیل کی۔

دستاویز میں مزید بتایا گیا کہ ریلوے نے گزشتہ مالی سال صرف 185 میٹرک ٹن فرنس آئل کی ترسیل کی جبکہ پی ایس او سے معاہدے کے مطابق ریلوے کو ہر سال 20 لاکھ میٹرک ٹن فرنس آئل کی ترسیل کرنی تھی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube