Thursday, January 20, 2022  | 16 Jamadilakhir, 1443

پارليمنٹ کامشترکہ اجلاس،حکومت کی جانب سےاپوزيشن کےچنداراکین سےخفيہ رابطے

SAMAA | - Posted: Nov 9, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Nov 9, 2021 | Last Updated: 2 months ago

 پارليمنٹ کےمشترکہ اجلاس کےليےحکومت کی جانب سے اپوزيشن کےچند ارکان سےخفيہ رابطے کيے گئے ہيں۔

سماء کے نمائندہ خصوصی نعیم اشرف بٹ کے مطابق اپوزيشن ارکان پارليمنٹ سےايک مرتبہ پھر خفيہ رابطوں کا سلسلہ شروع ہوگيا ہے۔ذرائع کے مطابق اعلی سرکاری شخصيات کی جانب سے اپوزيشن کےچند ارکان سے رابطہ کرکے پارليمنٹ کےمشترکہ اجلاس ميں حمايت کا کہاگياہے۔

 اپوزيشن ارکان کو کہا گيا ہےکہ پارليمنٹ کے مشترکہ اجلاس ميں اہم قانون سازی کے وقت ايوان سے باہر رہيں۔اس وقت پارليمنٹ ميں حکومت کوصرف چند ارکان کی برتری حاصل ہے تاہم بلز کی منظوری کے وقت حکومت زيادہ سےزيادہ حمايت کےليے اپوزيشن کےچند ارکان کی غيرحاضری کی کوششيں کررہی ہے جس سے دونوں اطراف کےدرميان فرق بڑھ جائےگااورقانون سازی آسان ہوسکےگی۔اس سےپہلے فيٹف کےمسودات کی منظوری کےوقت بھی اپوزيشن کے چند ارکان ايوان سےغيرحاضر رہےتھے۔

دوسری جانب اپوزيشن ليڈر شہبازشريف کی جانب سے بھی بھرپور کوشش کی جارہی ہے کہ قانون سازی کےوقت اپوزيشن کےتمام ارکان ايوان ميں موجود ہوں اور اسی ليے ارکان کےليے عشائيہ بھی رکھاگيا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube