Monday, December 6, 2021  | 30 Rabiulakhir, 1443

کمشنر کراچی نے دودھ کی قیمتوں میں اضافے کا عندیہ دے دیا

SAMAA | - Posted: Oct 21, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 21, 2021 | Last Updated: 2 months ago

کمشنر کراچی نے دودھ کی قیمتوں میں اضافے کا عندیہ دے دیا ہے۔ عدالت میں جمع کروائی گئی رپورٹ میں بتایا گیا کہ اب بھینسوں کی دیکھ بھال کے اخراجات بڑھ گئے ہیں۔

جمعرات کو سندھ ہائی کورٹ میں دودھ کی قیمتوں میں من مانے اضافے پر کمشنر کراچی اور دیگر کے خلاف توہین عدالت کی درخواست کی سماعت ہوئی۔ سندھ فوڈ اتھارٹی اور کمشنر آفس نے تحریری جواب جمع کرادیا۔

اسسٹنٹ کمشنر اعجاز رند نے بتایا کہ اسٹیک ہولڈرز سے میٹنگ ہوچکی ہے، دودھ کی قیمتوں کا جلد تعین کرلیا جائے گا۔ سندھ فوڈ اتھارٹی نے بتایا کہ دودھ کی کوالٹی کوبہتر بنانے کے لیے اقدامات کیے جارہے ہیں۔

عدالت نے کمشنر کراچی اور دیگر سے قیمتوں کو کنٹرول کرنے کیلئے اقدامات کی رپورٹ بھی طلب کرلی ہے۔ عدالت نے فوڈ اتھارٹی اور کمشنر کراچی کے جواب پر درخواست گزار سے الجواب طلب کرلیا ہے۔

سندھ ہائی کورٹ کی دودھ کی قیمتوں کے تعین کےاقدامات پررپورٹ طلب

عدالت میں کمشنر کراچی کی جانب سے جمع کروائی گئی رپورٹ میں بتایا گیا کہ تمام اسٹیک ہولڈرز کا اجلاس 28 اکتوبر کو طلب کرلیا ہے،اجلاس میں اسٹیک ہولڈرز کی تجاویز پرغور کیا جائے گا۔

کمشنر کراچی نے بتایا کہ سال 2018 میں عدالتی حکم پر کراچی میں دودھ کی فی لیٹر قیمت 94 روپے مقرر کی گئی،2018 کی نسبت اب جانوروں کی دیکھ بھال اور چارے کے اخراجات میں اضافہ ہوچکا ہے۔

کمشنر کراچی نے بتایا کہ 2018 میں ایک بھینس کے چارے اور دیکھ بھال پر 400 روپے اخراجات آتے تھے اور اس وقت فی بھینس کے چارے اور دیکھ بھال پر550 روپے سے زائد اخراجات آرہے ہیں۔

سندھ ہائيکورٹ میں دودھ کی قيمتوں ميں اضافے کے خلاف نئی درخواست مسترد

رپورٹ میں بتایا گیا کہ کراچی میں یومیہ 7 ہزار سے زائد ڈیری فارم سے 50 لاکھ لیٹر کے قریب دودھ کی پیداوار ہوتی ہے۔زائد قیمتوں پر دودھ فروخت کرنے والوں کے خلاف بھرپور کارروائیاں جاری ہیں۔ جنوری 2021 سے اب تک 1900 گراں فروشوں پر 1کروڑ روپے سے زائد جرمانہ عائد کیا گیا۔ دودھ کے معیار کوبہتر بنانے کے لیے سندھ فوڈ اتھارٹی کی جانب سے اچانک چھاپے مارنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

کمشنرکراچی کی رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ کراچی اور دیگر شہروں میں اخراجات اور دودھ کی قیمتوں کا جائزہ لیا جائے گا اوردودھ کی نیلامی کے دوران مانیٹرنگ بھی کی جائے گی۔

عدالت نے کیس کی مزید سماعت 9 دسمبر2021 تک ملتوی کردی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube