Wednesday, December 8, 2021  | 3 Jamadilawal, 1443

لاہور:فش فارمز میں مچھلیوں کی تیاری کے دلچسپ مراحل

SAMAA | - Posted: Oct 18, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Oct 18, 2021 | Last Updated: 2 months ago

مچھلی کی افزائش کے لئیےمارچ سے لے کر نومبر تک کا مہینہ بہترین ہوتا ہے

لاہورمیں فروخت ہونے والی زیادہ تر مچھلی دریا یا سمندر کی نہیں بلکہ مختلف سرکاری فش فارمز کی تیار کردہ ہوتی ہے۔ان مچھلیوں کی افزائش کے ابتدائی مرحلے کا کام محکمہ فشریز کے سرکاری فارم پر ہوتا ہے۔

لاہور میں مناواں فشریز کے ہرے رنگ کے پانی سے بھرے تالاب میں مچھلی کے بچوں کی دیکھ بھال ہورہی ہے۔یہاں موجود21  تالابوں میں تلاپیہ،موری،سلور گراس اور رہو کا 7 لاکھ بچہ تیار ہوچکا ہے۔

انتظامیہ کے مطابق بچہ مچھلی کی افزائش کے لئیےمارچ سے لے کر نومبر تک  کا مہینہ اور22 سے 32 ڈگری سینٹی گریڈ درجہ حرارت بہترین ہوتا ہے۔ان بچہ مچھلیوں کو دن میں 2 بار خاص خوراک دی جاتی ہے اور پانی میں یوریا بھی مکس کیا جاتا ہےتا کہ پانی سے بھی مچھلیوں کو خوراک ملتی رہے۔

مچھلی کے ان بچوں  کا سائز ڈیڑھ اور 4 انچ کا ہوتا ہے جنہیں پرائیوٹ فش فارمز کو بیچا جاتا ہے جوایک ایکڑ سے 15 سوکلو تک مچھلی حاصل کرلیتے ہیں۔ یہ ادارہ ایک سال میں تیار ہوئی تازہ مچھلی بھی فروخت کرتا ہے۔تازہ مچھلی کی پہچان یہ ہے کہ اس کی بدبو نہیں ہوتی اور اگر انگلی سے جسم پر دباؤ ڈالا جائے تو گڑھا نہیں پڑتا۔

محکمہ فشریز کے زیر انتظام پنجاب کے ہر ضلع میں ایک فارم موجود ہے جہاں پر رواں سیزن میں اب تک 52 لاکھ چھوٹی مچھلیوں کی پیداوار ہوچکی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube