Wednesday, December 8, 2021  | 3 Jamadilawal, 1443

بینکنگ فراڈ کیس: عدالت نے 9سال بعد فیصلہ سنادیا

SAMAA | - Posted: Oct 16, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 16, 2021 | Last Updated: 2 months ago

اسپیشل بینکنگ کورٹ نے 7 کروڑ روپے کے 9 سال پرانے بینکنگ فراڈ کیس کا فیصلہ سنادیا۔ خاتون سمیت 3 مجرمان کو 14، 14 سال قید اور جرمانے کی سزائیں سنائی گئی ہیں۔

کراچی میں نو سال قبل بارکلے بینک سے 7 کروڑ روپے کا فراڈ کیا گیا جس میں بینک کی پریمیئر ریلیشن شپ منیجر نیہا حسن سمیت 4 ملزمان محمد اشار الحسن، ضیاء الحسن اور رومان احسن کو نامزد کیا گیا تھا۔

اسپیشل بینکنگ کورٹ نے 9 سال بعد غیر ملکی بینک سے فراڈ کے مقدمے کا فیصلہ سنادیا، عدالت نے نیہا حسن، محمد اشار الحسن اور ضیاء الحسن کو جرم ثابت ہونے 14، 14 سال قید کی سزا سنائی جبکہ مرکزی ملزمہ نیہا حسن پر 15 کروڑ 70 لاکھ روپے اور ضیاء الحسن اور اشار الحسن پر 50، 50 لاکھ روپے جرمانہ عائد کیا گیا۔

عدالت نے ملزم رومان احسن کو عدم ثبوت پر بری کردیا جبکہ دیگر ملزمان کی ضمانتیں منسوخ کرکے انہیں جیل بھیجنے کا حکم دیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube