Wednesday, October 27, 2021  | 20 Rabiulawal, 1443

نيب کاترميمی آرڈيننس پروزارت قانون سے پيچيدہ معاملات پررہنمائی لينےکافيصلہ

SAMAA | - Posted: Oct 14, 2021 | Last Updated: 2 weeks ago
Posted: Oct 14, 2021 | Last Updated: 2 weeks ago

نے تمام ڈائریکٹر جنرلزسے مراسلے کےذريعے تجاويز مانگ لی ہيں

نيب نے نئےترميمی آرڈيننس پروفاقی وزارت قانون سے پيچيدہ معاملات پر رہنمائی لينےکا فيصلہ کرليا ہے۔

سماء کے نمائندہ خصوصی نعیم اشرف بٹ نے بتایا ہے کہ پیچیدہ معاملات پر رہنمائی کے لیے نيب ہيڈکوارٹرز نے تمام ڈائریکٹر جنرلزسے مراسلے کےذريعے تجاويز مانگ لی ہيں۔

مراسلے ميں کہا گيا ہے کہ متعلقہ نکات کے متعلق سوالات پر وزارت قانون کی تشريح اوروضاحت تک تمام فيصلوں کو روک لياجائے۔

ذرائع کے مطابق گذشتہ روز اطلاعات تھیں کہ نيب افسران کی جانب سے نئےترميمی آرڈيننس کےاجراء سے فراڈ کےاربوں روپے کےسيکڑوں کيسز بند ہونےکےخدشات کا اظہارکیا گیا تھا۔

اب اس مراسلے کےجواب ميں تمام ڈائریکٹر جنرلزاپنی رائے چيرمين آفس کو بھجوائيں گے جس ميں فراڈ کيسز کے مستقبل کے بارے ميں پوچھا جائےگا۔

 نيب ترجمان نے افسران کی جانب سے کسی قسم کےخدشات کی ترديد کرتےہوئےکہا ہےکہ ادارہ نئےترميمی آرڈيننس پر من وعن عمل کرےگا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube