Thursday, January 20, 2022  | 16 Jamadilakhir, 1443

نيب افسران کا پرائيويٹ افراد کے فراڈ کی تفتيش روکنےپرتحفظات کا اظہار

SAMAA | - Posted: Oct 12, 2021 | Last Updated: 3 months ago
Posted: Oct 12, 2021 | Last Updated: 3 months ago

نيب افسران نے پرائيويٹ افراد کے فراڈ کی تفتيش روکنے پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔

سماء کے نمائندہ خصوصی نعیم اشرف بٹ نےبتایا ہے کہ نیب کےافسران نے اپنے ڈی جيز کے ذريعے چيئرمين تک تحفظات پہنچانے کی سفارش کردی ہے۔ نيب افسران کو پرائيويٹ افراد کے فراڈ کی تفتيش روکنے پر تحفظات ہیں۔نيب دھوکادہی کے کيسز آرڈيننس سے نکالنے کے ليے حکومت سےسفارش کرےگا۔

نيب کےپاس 800 سے زائد فراڈ کيسز پورےملک ميں زيرتفتيش ہيں۔اب تک ڈبل شاہ کيس ميں4ارب روپےاور ديگر کيسز ميں اربوں روپے متاثرين کو واپس کيےگئے ہیں۔

نیب آرڈینس میں درج ہے کہ پرائیوٹ افراد یا ان کے کاروبارکے بارے میں نیب فراڈ کیسز کی کوئی تفتیش نہیں کرسکتا ہے۔ اس سے قبل نیب چیٹنگ پبلک ایکٹ لاء کے تحت تفتیش کرسکتا تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube