Tuesday, October 19, 2021  | 12 Rabiulawal, 1443

افغان جنگ کےبعدصورتحال کی ذمہ داری پاکستان پرعائد نہیں ہوتی،عمران خان

SAMAA | - Posted: Sep 27, 2021 | Last Updated: 3 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 27, 2021 | Last Updated: 3 weeks ago

فوٹو: ریڈیو پاکستان

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ افغانستان میں جنگ کے بعد صورتحال کی ذمہ داری پاکستان پرعائد نہیں ہوتی ہے۔

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ میں وزیراعظم عمران خان کا آرٹیکل شائع ہوا ہے۔ آرٹیکل میں وزیراعظم نے کہا ہے کہ افغانستان میں جنگ کےبعد پیدا ہونے والی صورتحال کا الزام پاکستان پر نہ تھوپا جائے،امریکی کانگریس میں امریکا کو ہونے والےنقصان سے متعلق الزام تراشیاں باعث حیرت ہیں۔

انھوں نے کہا کہ سال 2001 سے خبردارکیا کہ افغان جنگ ناقابل فتح ہے تاہم سابقہ حکومتیں اپنے مفادات کیلئے افغان معاملے پر امریکا کو خوش کرتی رہیں۔

عمران خان نے کہا کہ ماضی کے مجاہدین کو نائن الیون کے بعد راتوں رات دہشت گرد قراردے دیا گیا اوردہشت گردی کے خلاف امریکی جنگ کی حمایت پرعسکریت پسندوں نے پاکستان کےخلاف اعلان جنگ کردیا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان نے اپنی بقا کی جنگ لڑی اور دہشت گردی کو شکست دی، پاکستان نے بہترین فوج اورانٹیلیجنس کی وجہ سے دہشت گردی کو شکست دی ہے۔ نائن الیون کے بعد کابل میں بننے والی حکومتیں افغان عوام کی نظرمیں غیرقانونی تھیں اورکرپٹ اور ناکام افغان حکومتوں کے لیے کوئی بھی لڑنے کو تیار نہ تھا۔

عمران خان نے کہا کہ 3 لاکھ افغان فوجیوں کے ہتھیار ڈالنے کا الزام کیا پاکستان پرعائد کیا جاسکتا ہے، حقائق تسلیم کرنے کے بجائے بھارت فیک نیوز، افغان اورمغربی حکومتیں پاکستان کوالزام دیتی رہیں جبکہ بے بنیاد الزام تراشی کے باوجود پاکستان نے موثرترین بارڈرمنجمنٹ یقینی بنائی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube