Monday, October 25, 2021  | 18 Rabiulawal, 1443

لڑکا لڑکی تشددکیس:پولیس چالان میں عثمان مرزا،ابرار مرکزی کردار قرار

SAMAA | - Posted: Sep 25, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Sep 25, 2021 | Last Updated: 1 month ago
Usman-Mirza-1-1

فوٹو: عثمان مرزا

ای الیون لڑکا لڑکی تشدد کیس میں پولیس چالان کی تفصیلات سامنے آگئی جس میں عثمان مرزا اور ابرار کو مرکزی قرار دیا گیا ہے۔

پولیس چالان کے مطابق پولیس چالان میں عثمان مرزا اور ابرار مرکزی کردار قرار ہیں جنہوں نے ساتھیوں کے ساتھ نازیبا ویڈیو بنائی اور بلیک میل کر کے بھتہ وصول کیا۔

ملزم کی نشاندہی پر ویڈیو والا موبائل فون اور پستول برآمد کیا گیا۔

ملزم عمر بلال نے انکشاف کیا کہ عثمان مرزا کے کہنے پر متاثرہ لڑکا اور لڑکی سے سوا 11لاکھ روپے لیے جس میں سے 6 لاکھ روپےعثمان کو دیے اور باقی رقم دیگر ساتھیوں میں تقسیم کی۔

متاثرین کا مجسٹریٹ کے سامنے ریکارڈ بیان بھی چالان کا حصہ بنایا گیا ہے۔ متاثرہ لڑکی کے مطابق عثمان اور اس کے دوست ہمارا مذاق اڑاتے اور ویڈیو بناتے رہے۔

ملزمان جوڈیشل ریمانڈ پر اڈیالہ جیل میں ہیں جبکہ فرد جرم عائد کرنے کے لیے 28ستمبر کی تاریخ مقرر ہے۔

واضح رہے کہ واقعہ 18 نومبر 2020ء کو پیش آیا تھا جس کی ایف آئی آر 8 ماہ تاخیر سے درج ہوئی، مقدمہ متاثرین نہیں بلکہ ایس ایچ او تھانہ گولڑہ کی شکایت پر 6 جولائی 2021ء کو درج ہوا تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube