Friday, October 22, 2021  | 15 Rabiulawal, 1443

نوازشریف کےشناختی کارڈپرجعلی ویکسین کا اندراج،ڈیٹا آپریٹرزمعطل

SAMAA | - Posted: Sep 23, 2021 | Last Updated: 4 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 23, 2021 | Last Updated: 4 weeks ago

اندراج 22 ستمبر کو کیا گیا

لاہور کے کوٹ خواجہ سعید اسپتال میں نواز شريف کی ویکسین کے جعلی اندراج پر ایم ایس نے ڈیٹا انٹری آپریٹرز کو معطل کرکے تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی۔

لاہور کے کوٹ خواجہ سید اسپتال میں ایک روز قبل سابق وزیراعظم نواز شریف کے نام پر جعلی کرونا ویکسینیشن کے اندراج کا انکشاف ہوا تھا۔ واقعہ منظر عام پر آنے کے بعد اسپتال کے ایم ایس نے کرونا وائرس کی ویکسین سے متعلق ڈیٹا انٹری کرنے والے 2 آپریٹرز کو معطل کردیا۔

واقعہ کی تحقیقات کیلئے 3 رکنی کمیٹی بھی تشکیل دے دی گئی ہے۔ ڈاکٹر احمد جاوید قاضی کے مطابق کمیٹی غلط اندراج کے ذمہ داران کا تعین کرے گی۔ سکریٹری صحت کا کہنا ہے کہ کمیٹی اگلے 24 گھنٹے میں رپورٹ پیش کرنے کی مجاز ہوگی۔

واضح رہے کہ جمعرات 23 ستمبر کو بیرون ملک مقیم سابق وزیراعظم نواز شریف کے شناختی کارڈ پر لاہور میں جعلی ویکسینیشین کے اندراج کا انکشاف ہوا۔ نواز شريف کے شناختی کارڈ پر جعلی اندراج نادرا کے پورٹل پر بھی اپلوڈ کیا گیا۔ سابق وزیراعظم کے شناختی کارڈ پر یہ اندراج گزشتہ روز 22 ستمبر کو شام 4 بج کر 4 منٹ پر کیا گیا۔

اپلوڈ کی گئی تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم کو سائنو ویک کی پہلی خوراک لگائی گئی۔  جس سینٹر کے نام پر ویکسین کا اندراج ہوا وہ کوٹ خواجہ سید اسپتال میں قائم کیا گیا ہے۔ کرونا ویکسین کیلئے بنائی گئی ہاٹ لائن پر بھی آگر مذکورہ شناختی کارڈ کا نمبر 1166 پر بھیج کر تصدیق کی جائے تو اس میں بھی ویکسینیشن  کا اندراج دکھایا جاتا ہے۔ جب کہ انہیں دوسری کرونا ویکسین کی ڈوز کیلئے 22 اکتوبر کی بھی تاریخ دی گئی۔

ترجمان پنجاب حکومت فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ واقعہ کے خلاف تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے، مریم نواز شریف محمد صفدر نے جعلی سازی میں پی ایچ ڈی کی ہوئی ہے۔ ممکن ہے کہ نواز شریف کے خاندان میں کسی نے شناختی کارڈ پر جعلی ویکسین سرٹیفیکیٹ حاصل کیا ہو۔

اطلاعات منظر عام پر آنے کے بعد ن لیگ کے سینیر رہنما محمد زبیر کا کہنا تھا کہ یہ نادرا، تبدیلی حکومت اور پنجاب کی ناکامی ہے کہ کیسے نواز شریف کے نام پر غلط اندراج کیا گیا۔ یہ اندراج محکمہ صحت کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

واضح رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف سال 2019 سے علاج کیلئے لندن میں مقیم ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube