Saturday, October 16, 2021  | 9 Rabiulawal, 1443

پیٹرول کی قیمتوں میں اضافےکےبعد عمران خان اپوزیشن کےنشانےپر

SAMAA | - Posted: Sep 16, 2021 | Last Updated: 4 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 16, 2021 | Last Updated: 4 weeks ago

تحریک انصاف دورِ حکومت میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں غیرمعمولی اضافے کے بعد اپوزیشن جماعتوں نے عمران خان کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

پاکستان مسلم لیگ نون صدر و اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت نے پٹرول کی قيمت ميں اضافہ کرکے مہنگائی کا نيا بم چلايا ہے، حکومت کی معاشی دہشت گردی عوام کيلئے قیامت صغرٰی سے کم نہیں۔ بےحس اور ظالم حکمران عوام کو بغاوت پر مجبور کررہے ہیں، حکمران اپنی ناکامیوں پر استعفیٰ کے بجائے ملک کو اندھے کنویں میں لےجارہے ہيں۔

مسلم لیگ نون نے پیڑول کی قیمتوں میں تاریخی اضافے پر احتجاج کا بھی اعلان کیا ہے۔

دوسری جانب پاکستان پیپلزپارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ پٹرول کی قيمت بلند ترین سطح پر پہنچا کرعمران خان نے عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈالا، وزیراعظم نے کہا تھا کہ میں رلاؤں گا اور آج پوری قوم رو رہی ہے جبکہ خان صاحب چین کی بانسری بجارہے ہیں۔

تحریک انصاف میں روز مرہ استعمال کی اشیاء دُگنی سےزیادہ مہنگی

انہوں وزیراعظم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ خان صاحب قوم کے اچھے دن کب آئیں گے، عوام کو ریلیف پہنچانے کے بڑے بڑے دعوے کہاں گئے؟۔

دوسری جانب پیٹرول کی قیتموں میں تاریخی اضافے کے بعد اشیائے خودونوش کی قیتموں میں بھی اضافہ ہوگیا ہے۔

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں غیرمعمولی اضافہ

واضح رہے کہ حکومت کی جانب سے قیمتوں میں اضافے کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 123.30 روپے، ہائی اسپیڈل ڈیزل 120.4روپے، مٹی کا تیل 92.26 روپے جبکہ لائٹ ڈیزل 90.69 روپے فی لیٹر ہوگیا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube