Sunday, October 24, 2021  | 17 Rabiulawal, 1443

نشے کی رقم نہ ملنے پرشوہر نے بیوی پرتیزاب پھینکا،پولیس

SAMAA | - Posted: Sep 9, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Sep 9, 2021 | Last Updated: 2 months ago

acid-attack

کراچی کے علاقے قیوم آباد میں ایک شخص اپنی بیوی پر تیزاب پھینک کر فرار ہوگیا۔ متاثرہ خاتون کو زخمی حالت میں سول اسپتال کراچی کے برنس سینٹر منتقل کیا گیا۔ ابتدائی طبی امداد کے بعد ڈاکٹرز نے بتایا کہ متاثرہ خاتون کے جسم کا 45 فیصد حصہ جل گیا ہے لیکن اب اس کی حالت میں تیزی سے بہتری ہورہی ہے۔

متثرہ خاتون کی شناخت صائمہ کے نام سے کرلی گئی، صائمہ 3 بچوں کی ماں ہے، اس کا شوہر ساجد ریاض نشے کا عادی ہے، اپنے شوہر سے تنگ آکر صائمہ نے بچوں سمیت اپنے والدین کے قیوم آباد میں واقع گھر میں رہائش اختیار کر رکھی تھی، صائمہ ڈیفنس اور کلفٹن کے علاقوں میں واقع گھروں میں کام کرکے اپنا اور اپنے بچوں کا پیٹ پالتی تھی۔

ڈیفنس پولیس نے مچھر کالونی میں کارروائی کرتے ہوئے ملزم ساجد ریاض کو گرفتار کر لیا۔ ملزم کی گرفتاری ظاہر کرتے ہوئے ایس ایس پی انوسٹی گیشن ساؤتھ ون عمران مرزا نے بتایا کہ ملزم نشے کا عادی ہے، ملزم کی متاثرہ خاتون سے 12 سال قبل شادی ہوئی اور اس کے 3 بچے بھی ہیں لیکن وہ ملزم سے تنگ آکر اپنے ماں باپ کے گھر میں رہ رہی تھی۔

ڈیفنس پولیس اسٹیشن کے انویسٹی گیشن انچارج چوہدری سعید نے سماء ڈیجیٹل کو بتایا کہ ملزم نشے کا عادی ہے اور اپنی بیوی سے نشہ خریدنے کیلئے رقم کا تقاضا کرتا تھا۔ انسٹی گیشن انچارج کے مطابق ملزم ماضی میں بھی نشہ خریدنے کیلئے اپنی بیوی سے رقم لیتا تھا اور انکار کی صورت میں اسے بدترین تشدد کا نشانہ بناتا تھا۔

چوہدری سعید کے مطابق صائمہ اپنے شوہر کے ظلم وستم سے تنگ آکر اپنے ماں باپ کے گھر آئی تھی لیکن ملزم یہاں بھی اس سے رقم لینے کیلئے اکثر آتا تھا اور انکار پر تشدد کا نشانا بناتا تھا۔ انویسٹی گیشن انچارج نے بتایا کہ واقع کے روز بھی ملزم اپنی بیوی سے پیسے مانگنے ہی گیا تھا اور انکار پر اس نے اپنی بیوی پر تیزاب پھینکا۔

صائمہ کے بھائی عامر نے سماء ڈیجیٹل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کوئی باپ یا بھائی یہ نہیں چاہے گا کہ اس کی شادی شدہ بیٹی یا بہن گھر آکر بیٹھ جائے لیکن ملزم کی بے جا مار دھاڑ سے تنگ آکر ہم نے صائمہ کو اپنے گھر بلالیا۔

عامر نے بتایا کہ جس دن صائمہ گھر آئی تھی اس دن ملزم نے اسے مار مار کر اس کی دونوں ٹانگیں توڑ دی تھیں اور اس واقعے کی شکایت تھانہ ڈیفنس میں درج بھی کروائی گئی مگر پولیس نے صلح صفائی کے بعد معاملہ ٹال دیا۔

عامر نے بتایا کہ صائمہ کو کئی بار کہا کہ وہ ملزم سے طلاق لے مگر وہ بدنامی کے ڈر سے طلاق کیلئے منع کرتی رہی۔

انوسٹی گیشن انچارج کے مطابق برنس سینٹر کی انتظامیہ کے مطابق صائمہ کی حالت تیزی سے بہتر ہورہی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube