Monday, January 24, 2022  | 20 Jamadilakhir, 1443

سندھ:12سے17سال کےبچوں کوویکسین نہیں لگارہے،عذراپیچوہو

SAMAA | - Posted: Sep 8, 2021 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Sep 8, 2021 | Last Updated: 5 months ago

فائل فوٹو

وزیر صحت سندھ عذرا پیچوہو نے واضح کرتے ہوئے کہا ہے کہ این سی او سی کے فیصلے کے تحت 12 سے 17 سال کے بچوں کو کرونا سے بچاؤ کی ویکسین نہ لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔

کراچی میں میڈیا سے گفتگو میں کرونا وائرس کی چوتھی لہر اور بڑھتے ڈیلٹا ویرینٹ پر بات کرتے ہوئے صوبائی وزیر صحت نے کہا کہ دنیا بھر میں 12 سے 17 سال کے بچوں کو ویکسین لگانے کے کامیاب ٹرائل ہوئے ہیں، ڈبليو ايچ او سے منظور شدہ ویکسین 12 سے 17سال کے بچوں کو لگائی جاتی ہے، تاہم پاکستان میں فی الحال اس کی منظوری نہیں دی ہے۔

تعلیمی اداروں سے متعلق افواہوں پر ان کا کہنا تھا کہ اسکول بند کرنے کے حق میں نہیں ہیں۔ محکمہ تعلیم اور محکمہ صحت اسکول کھولنے سے متعلق ایک پیج پر ہیں۔

عذرا پیچوہو کے مطابق مسئلہ سارا ایس او پیز فالو کرنے کا ہے، لوگوں سے اپیل ہے کہ کرونا سے بچاؤ کی تمام تر احتیاطی تدابیر پر عمل کریں۔ جلوس اور جلسوں میں ایس او پیز فالو نہیں ہوتے۔ اس وقت کرونا کے 7030 افراد انتقال کر گئے ہیں، تمام سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں کو ویکسینیشن کو آگے بڑھانا ہوگا۔

اس موقع پر عوام سے ایک بار پھر اپیل کرتے ہوئے وزیر صحت سندھ کا کہنا تھا کہ لوگ ضرور ویکسن لگائیں اور  شادی ہال ہجوم میں جانے سے گریز کریں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube