Tuesday, October 19, 2021  | 12 Rabiulawal, 1443

نون لیگ کے2بیانیےہوں یا100،عمران خان مہنگائی کاجواب دیں،احسن اقبال

SAMAA | - Posted: Sep 6, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Sep 6, 2021 | Last Updated: 1 month ago

پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنما احسن اقبال نے کہا ہے کہ نون لیگ ایک طاقت ہے اور اس کےکئی بیانیوں سے کوئی فرق نہیں پڑتا البتہ وزیراعظم کوپیٹرول،ڈیزل، بجلی اور گیس مہنگی کرنےکا جواب دینا ہوگا۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے باہر احسن اقبال نے صحافیوں سے بات کرتےہوئے بتایا کہ پاکستان مسلم لیگ نون کے دو بیانیے ہوں یا سو ہوں لیکن نون لیگ ایک طاقت ہے،ہمارے کتنے بیانیے ہیں اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔انھوں نے سوال کیا کہ عمران خان جواب دیں کہ پیٹرول،ڈیزل ، بجلی اور گیس کیوں مہنگی کی۔ لیکن یہ جواب نہیں دے سکتے کیونکہ یہ مافیا کی حکومت ہے۔

احسن اقبال نے کہا کہ عمران خان صبح و شام چئیرمین نیب سے پوچھتے ہیں کہ اپوزیشن کے خلاف کوئی کیس بنا ہے یہ نہیں۔ یہ سوچتے ہیں کہ انتخابات میں ہم سب جیل جائیں گے اور یہ اکیلے لڑیں گے تاہم اب جیل جانےکی باری ان کی ہے۔

اپنے کیس سے متعلق انھوں نے کہا کہ نارووال اسپورٹس سٹی کیس لطیفے کے طور پر یاد رکھا جائے گا۔ نیب نے اس کیس میں انکوائری کا آغازاس بنیاد پر کیا کہ سرحد کے قریب 6 ارب روپے خرچ کردیئےجبکہ حقیقت یہ ہے کہ اس منصوبے پر ڈھائی ارب روپے روپے لگے۔ انھوں نے طنزیہ کہا کہ اس بات پر نیب کو نوبل انعام ملنا چائیے کہ کیسے ڈھائی ارب روپے کو 6 ارب روپے بنادیا۔

احسن اقبال نے بتایا کہ نارروال اسپورٹس سٹی پاک بھارت سرحد سے 14 کلومیٹر دور ہے تاہم نیب کی انکوائری میں کہا گیا کہ یہ منصوبہ سرحد سے800 میٹر کے فاصلے پر ہے۔نیب کی انکوائری ان باتوں پرہوئی لیکن ریفرنس میں ان کا ذکر ہی نہیں۔

اس کیس سے متعلق انھوں نے مزید بتایا کہ بین الصوبائی رابطہ کےافسران کو شریک ملزم بنادیا گیا جبکہ تیس پینتیس افسران کو ہراساں کیا گیا۔اب  وہ افسران کوئی کام کرنے پرتیار نہیں ہیں۔

احسن اقبال نے نیب کو آکاش بیل سے تشبیہ دی اور کہا کہ نیب جس فائل پر ہاتھ رکھے اس پرکوئی بھی افسرکام کرنے کو تیار نہیں ہوتا۔نیب نے پاکستان کے ترقیاتی ڈھانچے کو تباہ کردیا۔نیب کی جانب سے جھوٹے کیس صرف وزیراعظم عمران خان کی انتقام کی آگ بجھانے کیلئے بنائے جارہے ہیں اور رکے ہوئے ترقیاتی منصوبوں پر اب 2000ارب روپے اضافی لگیں گے۔

حکومتی منصوبے پرتنقید کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ کرتار پور راہدری  پر بغیر منظوری اربوں روپے لگا دیئے کیونکہ وہاں چھڑی ہےلیکن یہاں سویلین  پر کیس بنا کر جیل میں ڈال دیا جاتا ہے۔

چئیرمین نیب سے متعلق احسن اقبال نے کہا کہ چئیرمین نیب کی ملازمت میں ایک مہینہ رہ گیا ہے۔سننے میں آرہا ہے کہ ایوان صدر میں قائم آرڈیننس فیکٹری سے ملازمت میں توسیع کا آرڈیننس آرہا ہے۔

احسن اقبال نے مزید کہا کہ نیب میں کئی ایسے محنتی افسران بھی موجود ہیں جنہوں نے کرپشن کے اصل کیس بھی پکڑے لیکن سیاسی کیسوں نے ان کی محنت بھی ضائع  کردی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube