Wednesday, October 27, 2021  | 20 Rabiulawal, 1443

لاہور: خاتون ٹک ٹاکر کیخلاف کارروائی کیلئے درخواست خارج

SAMAA | - Posted: Sep 1, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Sep 1, 2021 | Last Updated: 2 months ago
LHC

فوٹو: رپورٹر ارشد علی

لاہور ہائیکورٹ نے خاتون ٹک ٹاکر عائشہ اکرم کے خلاف کریمنل کارروائی کے لیے درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کر دی۔

جسٹس شاہد حسین چھٹہ نے شہری عصمت اللہ کی رانا سکندر ایڈووکیٹ کی وساطت سے ٹک ٹاکر عائشہ اکرم کے خلاف کریمنل کارروائی کے لیے درخواست پر سماعت کی۔

عدالت نے درخواست کے قابل سماعت ہونے پر فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

دوران سماعت عدالت نے ریمارکس دیے کہ کس طرح ہائیکورٹ میں پرائیویٹ شہری کے خلاف براہ راست درخواست قابل سماعت ہے اور عدالت کس قانون کے تحت عام شہری کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دے سکتی ہے۔ مقدمہ درج کرنے یا نہ کرنے کا حکم دینا سیشن کورٹ کا کام ہے۔

درخواست میں آئی جی پنجاب، عائشہ اکرم، سیکریٹری لوکل گورنمنٹ سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا۔

وکیل درخواست گزار نے مؤقف اپنایا کہ سوشل میڈیا کی ویڈیوز کے مطابق عائشہ اکرم نے اپنے فالورز کو مینار پاکستان آنے کی دعوت دی اور مینار پاکستان کے گارڈ کے مطابق عائشہ اکرم کے پاس دو بار بچ نکلنے کا موقع تھا لیکن وہ وہاں ہی ٹھہری۔

درخواست گزار کے مطابق عائشہ اکرم نے فینز کو دعوت دینے کے بعد مینار پاکستان کی سیکیورٹی کو اس متعلق آگاہ نہیں کیا جبکہ اس واقعہ کے بعد دنیا بھر میں پاکستان کو شرمندگی کا سامنا ہوا۔

درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ ہجوم کو اکسانے پر عائشہ اکرم کے خلاف فوجداری کارروائی اور ٹک ٹاک سمیت دیگر سوشل میڈیا ایپس سے غیر اخلاقی مواد ہٹا کر ریگولیٹ کیا جائے۔ ٹک ٹاکرز کا پبلک مقامات سے فینز سے ملنے کے لیے بھی ایس او پیز بنائیں جائیں۔

واضح رہے کہ 14اگست کو لاہور کے گریٹر اقبال پارک میں واقع مینار پاکستان کے قریب خاتون سے دست درازی کا واقعہ پیش آیا تھا۔ واقعے کے بعد پولیس نے 400افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا جبکہ 100 سے زائد ملزمان کو گرفتار کرکے جیل بھیج جا چکا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube