Wednesday, October 20, 2021  | 13 Rabiulawal, 1443

الیکٹرونک ووٹنگ مشین الیکشن کمیشن کےمعیارکےمطابق تیارکی گئی،شبلی فراز

SAMAA | - Posted: Aug 25, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 25, 2021 | Last Updated: 2 months ago

ہمارے ملک میں انتخابات تنازعات کا شکار ہوتے ہیں

وفاقی وزیرشبلی فراز نے کہا ہے کہ ملک میں انتخابی تنازعات کے حل کے لیے الیکٹرونک ووٹنگ مشین الیکشن کمیشن کے مہیا کردہ معیار کے مطابق تیار کی گئی ہے۔

بدھ کو اسلام آباد میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی شبلی فراز نے بتایا کہ وزیراعظم نے پہلا ٹاسک الیکٹرونک ووٹنگ مشین پر کام کرنے کا دیا تھا کیوں کہ ہمارے ملک میں انتخابات تنازعات کا شکار ہوتے ہیں اور انتخابات میں پیسے کا استعمال اور دھونس چلانا کلچر بن چکا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ 3فیصد رجسٹرڈ ووٹرز کے ووٹ ریجکٹ کردیئے جاتے ہیں اورمینول سسٹم میں کئی جگہوں پر عملے کا کردار بھی قابل رشک نہیں ہوتا تاہم اب انسانی مداخلت کم سے کم کرکے ٹیکنالوجی کو راستہ دیا ہے اور ووٹنگ مشین الیکشن کمیشن کے مہیا کردہ معیار کے مطابق بنائی گئی ہے۔

الیکٹرونک ووٹنگ مشین سے متعلق انھوں نے بتایا کہ اس مشین کے 3 یونٹ ہیں اور یہ انٹرنیٹ کنکشن اور بیلوٹوتھ کے بغیر ہے، ووٹنگ مشین کو ہیک بھی نہیں کیا جاسکتا ہے اور مشین میں کسی بٹن کے ایک سے زیادہ فنکشنز نہیں ہیں۔

شبلی فراز نےبتایا کہ الیکشن کمیشن کے سوالات کے جوابات دیئے ہیں اور ٹیکنالوجی کا استعمال ہم نے عام انتخابات میں ہی کرنا ہے۔

وفاقی وزیر نے واضح کیا کہ تمام آبادی کو مدنظر رکھتے ہوئے ووٹنگ مشین تیار کی گئی ہے۔ ہمارے پاس پیپر ٹریل کا سسٹم بھی  موجود ہوگا اور الیکٹرانک سسٹم بھی کام کرے گا۔ اس مشین سے 15 سے 20 منٹ میں انتخابی نتیجہ وصول ہوجائے گا اور 6 سے7 ماہ میں مشینوں کی تعداد بھی بڑھائی جاسکتی ہے۔

شبلی فراز نے یہ بھی کہا کہ الیکٹرونک ووٹنگ مشین سے متعلق آگاہی دیتے کے لیے اپوزیشن کو بلایا جائے گا لیکن مخالفت برائے مخالفت کا کوئی علاج نہیں۔ پولنگ اسٹیشن میں آرمی پولیس کی تعیناتی سے اس مشین کا تعلق نہیں ہے اور ووٹنگ مشین کی قیمت امپورٹ کی گئی مشینوں کی قیمت سے کم ہوگی۔

انھوں نے مزید بتایا کہ الیکشن کمیشن نے 58 نکات سے متعلق فہرست دی تھی اور یہ مشین ان تمام معیار پر پورا اترتی ہے۔ الیکشن کمیشن نے مزید کوئی تبدیلی کا کہا تو وہ بھی پوری کی جائیں گی اورتمام متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کے پاس ہم جائیں گے۔ فافن اور یو این ڈی پی کو بھی مشین دکھانے کے لیے بلایا گیا اور انھوں نے بھی کسی خدشات کا اظہار نہیں کیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube