Saturday, October 16, 2021  | 9 Rabiulawal, 1443

حکومت کاعالمی مبصرین سےالیکٹرانک ووٹنگ مشین کامعائنہ کرانےکا فیصلہ

SAMAA | - Posted: Aug 20, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 20, 2021 | Last Updated: 2 months ago

حکومت نے بین الاقوامی مبصرین سے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کا معائنہ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے فافن اور پلڈاٹ کوالیکٹرانک ووٹنگ مشین کے معائنے کی دعوت دی ہے۔اس سلسلے میں وزیرسائنس و ٹیکنالوجی شبلی فراز نے سی ای او فافن اور پلڈاٹ کو خط لکھ دیا ہے۔

خط میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم کے ویژن اور وفاقی کابینہ کی ہدایت پر ای وی ایم تیار کی گئی ہے اور صدر پاکستان سمیت وزیراعظم  اور پارلیمنٹرینز الیکشن کمیشن میں ای وی ایم کا معائنہ کرچکے ہیں اور اب فافن اور پلڈاٹ کو بریفنگ دینا چاہتے ہیں۔

منگل کو پریس کانفرنس میں وزیراطلاعات فواد چوہدری نےالیکٹرونک ووٹنگ مشین سے متعلق کہا تھا کہ عام انتخابات میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین کا استعمال ضروری ہے۔ آئندہ 15 روز میں الیکٹرونک ووٹنگ مشین کے حوالے سے فیصلہ کن اقدامات کریں گےاور چاہتے ہیں کہ اس معاملے پر اپوزیشن بھی ہمارا ساتھ دے۔

پچھلے ہفتے وفاقی وزیرسائنس اینڈ ٹیکنالوجی شبلی فراز نے الیکٹرونک ووٹنگ مشین کی خصوصیات بتاتے ہوئے بتایا تھا کہ مشین کو ہیک کرنا ممکن نہیں ہوگا اور یہ انٹرنیٹ سے منسلک نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اب ٹیکنالوجی کا دور ہے اور اس لئےانتخابات کو شفاف بنانے کے لیے مشین بنائی گئی ہے جس کو ہیک بھی نہیں جاسکتا ہے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان میں ٹیکنالوجی کا آنا کوئی مشکل بات نہیں ہے۔ ووٹنگ مشین کا وائی فائی، بلیو ٹوتھ، انٹرنیٹ سے کوئی
تعلق نہیں ہے۔ایک ووٹر ایک سے زائد ووٹ نہیں ڈال سکتا اور ایک منٹ کے وقفے کے بعد دوسرا ووٹ کاسٹ کیا جا سکتا ہے۔

شبلی فراز نے مزید بتایا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اسے پارلمنٹ اراکین کے سامنے رکھیں۔ الیکشن کا نتیجہ موبائل کے ذریعے منتقل ہوگا اور یہ مشین 24 گھنٹے بیٹری پر بھی چل سکے گی جبکہ اس مشین کا ڈیٹا ضائع بھی نہیں ہوگا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube