Wednesday, October 20, 2021  | 13 Rabiulawal, 1443

سپریم کورٹ میں پہلی بار خاتون جج کی تعیناتی کاامکان

SAMAA | and - Posted: Aug 12, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Aug 12, 2021 | Last Updated: 2 months ago

جسٹس عائشہ ملک متوقع طور پر سپریم کورٹ آف پاکستان میں 74 سال کے دوران تعینات ہونیوالی پہلی خاتون جج ہوں گی۔ چیف جسٹس گلزار احمد نے عائشہ ملک کو نامزد کیا ہے
سپریم کورٹ کے معزز جج جسٹس مشیر عالم 17 اگست کو ریٹائرڈ ہورہے ہیں اور جسٹس عائشہ ملک متوقع طور پر ان کی جگہ تعینات ہوں گی۔
جسٹس عائشہ ملک 27 مارچ 2012ء سے لاہور ہائیکورٹ کی جج ہیں، انہوں نے گریجویشن گورنمنٹ کالج اف کامرس اینڈ اکنامکس کراچی ایل ایل بی کی ڈگری پاکستان کالج اف لاء لاہور اور ایل ایل ایم کی ڈگری ہارورڈ لاء اسکول سے حاصل کی۔
پاکستان جنوبی ایشیاء کا واحد ملک ہے جہاں اب تک سپریم کورٹ میں کسی خاتون جج کی تعیناتی نہیں ہوئی۔
انسانی حقوق کمیشن پاکستان کے مطابق ملک میں صرف 5.3 فیصد جج خواتین ہیں اور یہ تناسب پورے جنوبی ایشیاء میں سب سے کم ہے۔
پاکستان میں سب سے پہلی تعینات ہونے والی خاتون جج خالدہ خورشید تھیں جن کی تعیناتی 1994ء میں اینٹی کرپشن کورٹ میں ہوئی تھی اور اس کے بعد 1994ء میں ان کو ہائیکورٹ کا جج تعینات کردیا گیا تھا۔
جسٹس عائشہ نے پنجاب میں ریپ سے متاثرہ خواتین کی ٹو فنگر ٹیسٹ پر پابندی سے متعلق تاریخی فیصلہ دیا تھا، عدالت نے اپنے 30 صفحات پر مشتمل فیصلے میں ٹیسٹ کو غیرآئنی قرار دیدیا تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube