Wednesday, October 27, 2021  | 20 Rabiulawal, 1443

ووٹنگ مشین کا وائی فائی،بلیوٹوتھ،انٹرنیٹ سے تعلق نہیں،شبلی فراز

SAMAA | - Posted: Aug 11, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 11, 2021 | Last Updated: 3 months ago

مشین کو ہیک کرنا ممکن نہیں ہوگا

 

وفاقی وزیرشبلی فراز نے الیکٹرونک ووٹنگ مشین کی خصوصیات بتاتے ہوئے کہا ہے کہ مشین کو ہیک کرنا ممکن نہیں ہوگا اور یہ انٹرنیٹ سے منسلک نہیں ہے۔

وزیرسائنس اینڈ ٹیکنالوجی شبلی فرازنے الیکٹرانک ووٹنگ مشین سےمتعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ اب ٹیکنالوجی کا دور ہے اور اس لئےانتخابات کو شفاف بنانے کے لیے مشین بنائی گئی ہے جس کو ہیک بھی نہیں جاسکتا ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان میں ٹیکنالوجی کا آنا کوئی مشکل بات نہیں ہے۔ ووٹنگ مشین کا وائی فائی، بلیو ٹوتھ، انٹرنیٹ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ایک ووٹر ایک سے زائد ووٹ نہیں ڈال سکتا اور ایک منٹ کے وقفے کے بعد دوسرا ووٹ کاسٹ کیا جا سکتا ہے۔الیکشن کا نتیجہ موبائل کے ذریعے منتقل ہوگا اور یہ مشین 24 گھنٹے بیٹری پر بھی چل سکے گی جبکہ اس مشین کا ڈیٹا ضائع بھی نہیں ہوگا۔شبلی فراز نے مزید بتایا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اسے پارلمنٹ اراکین کے سامنے رکھیں۔

اس موقع پر اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے بھی ووٹ ڈالنے کے عمل کا مظاہرہ دیکھا۔ انھوں نے کہا کہ تمام پارلیمانی پارٹیاں آئیں اور اس ووٹنگ مشین کو دیکھیں۔اگر کسی پارٹی کے تحفظات ہیں تو حکومت کو دور کرنا چاہئے۔واضح رہے کہ پچھلے ہفتے وزیراعظم عمران خان نے بھی الیکٹرونک ووٹنگ مشین کی جانچ کی تھی۔

چھ ماہ میں 4لاکھ الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں بنالیں گے،شبلی فراز

 

ایک ماہ قبل شبلی فراز نے بتایا تھا کہ شفاف اور قابل اعتبار الیکشن کیلئے الیکٹرانک ووٹنگ (ای ایم وی) مشینیں تیار کی جارہی ہیں اور وزیراعظم عمران خان کی خواہش ہے کہ الیکشن غیرمتنازع ہوں، الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے حوالے سے اپوزیشن کی تسلی کروائیں گے۔ انھوں نے بتایا کہ نسٹ اور دیگر ماتحت ادارے مل کر الیکٹرانک ووٹنگ مشین بنا رہے ہیں، ہم چاہتے ہیں کہ سب اس کو تسلیم کریں، ایک الیکٹرانک ووٹنگ مشین پر 65 سے 80 ہزار روپے لاگت آئے گی۔

وزیر سائنس و ٹیکنالوجی نے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین میں خصوصی پیپر استعمال ہوگا اور اس کی بیٹری بھی 2 دن تک چلے گی، الیکٹرانک ووٹنگ مشین منفی 10 سے 55 ڈگری تک کے درجہ حرارت میں کام کرسکتی ہے، 2 ہزار مشینیں روزانہ کی بنیاد پر بنانے کی صلاحیت رکھتے ہیں، 6 ماہ میں 4 لاکھ الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں بنا لیں گے۔

انہوں نے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین ضمنی الیکشن میں استعمال ہوسکتی ہیں، الیکٹرانک ووٹنگ کو استعمال میں لانے کے ساتھ ساتھ ووٹ کا پرنٹ ڈبے میں جائے گا اور اس کا کاغذ 5 سال تک خراب نہیں ہوگا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube